ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان میں ایران کی سرجیکل اسٹرائیک: پاکستان میں گھس کر 3 سال پہلے اغوا ہوئے دو فوجیوں کو کرایا رہا

ایرانی جوانوں نے تین سال پہلے جنوب مغربی پاکستان میں دہشت گرد تنظیم جیش العدل کے ذریعے اغوا کئے گئے دو سرحدی گارڈس کو چھڑا لیا۔

  • Share this:
پاکستان میں ایران کی سرجیکل اسٹرائیک: پاکستان میں گھس کر 3 سال پہلے اغوا ہوئے دو فوجیوں کو کرایا رہا
ایرانی جوانوں نے تین سال پہلے جنوب مغربی پاکستان میں دہشت گرد تنظیم جیش العدل کے ذریعے اغوا کئے گئے دو سرحدی گارڈس کو چھڑا لیا۔

پاکستان میں ایک اور سرجیکل اسٹرائک کی خبر سامنے آئی ہے۔ رپورٹس میں دعوی کیا جا رہا ہے کہ ایران کے ریوولیوشنری گارڈ نے دو فروری کی رات پاکستان میں داخل ہوکر اس سرجیکل اسٹرائک کو انجام دیا ہے۔ ایرانی جوانوں نے تین سال پہلے جنوب مغربی پاکستان میں دہشت گرد تنظیم جیش العدل کے ذریعے اغوا کئے گئے دو سرحدی گارڈس کو چھڑا لیا۔


ایرانی فوج نے اپنے مشن کو کامیاب بتایا۔۔

رپورٹس کے مطابق ایران نے پاکستانی فوج کو اس ایکشن کی پہلے سے کوئی جانکاری نہیں دی تھی۔ تین فروری کو ایرانی فوجیوں نے اہنے مشن کو کامیاب بتایا اور جوانوں کو آزاد کروانے کی جانکاری بھی دی۔ جیش العدل دہشت گرد گروپ جنوب۔مغربی پاکستان میں ایکٹو ہے اور مانا جا رہا ہے ہے کہ ایرانہ فوج نے اسی علاقے میں سرجیکل اسٹرائیک کو انجام دیا ہے۔


2018 میں ایرانہ فوجیوں کا اغوا کیا تھا۔۔
یہ تنظیم ایران کے جنوب۔مغربی علاقے میں حملہ کرتی رہی ہے۔ اس نے فروری 2019 میں اسی علاقے میں ایرانی جوانوں کی بس پر حملہ کیا تھا۔ اس حملئ میں کئی ایرانی فوجی مارے گئے تھے اور درجنوں زخمی ہوئے تھے۔ اکتوبر 2018 میں اس دہشت گرد تنظیم نے 14 ایرانی فوجیوں کا اغوا کر لیا تھا۔ ایران کے سستان بلوچستان صوبے کے میر جاوے بارڈر پر اس واقعے کو انجام دیا گیا تھا۔ ان میں سے پانچ فوجیوں کو ایک مہینے بعد چھوڑ دیا گیا تھا۔

ہندستان ۔ امریکہ پاکستان میں گھس کر آپریشن کو دے چکے ہیں انجام ۔
ایران تیسرا ملک ہے جس نے پاکستان میں سرجیکل اسٹرائک کی ہے۔ ایران سے پہلے امریکہ نے دو مئی 2011 میں پاکستان کے ایٹہ آباد میں گھس کر القاعدہ سرغنہ لادین کو مارا تھا۔ اس کے بعد ہندستان نے بھی ستمبر 2016 میں سرجیکل اسٹرائیک کی تھی۔ 14 فروری 2019 کو پلوامہ حملے کے بعد بھی ہندستان نے اسی سال 26 فروری کو بالاکوٹ میں ایئر اسٹرائک کی تھی۔
Published by: Sana Naeem
First published: Feb 04, 2021 10:07 PM IST