ہوم » نیوز » عالمی منظر

ایران نے کہا۔ امریکہ پابندی ہٹائے تو ہم بات چیت کے لئے تیار ہیں

ایران کے صدر حسن روحانی نے کہا کہ’’ میں آپ کو بتانا چاہتا ہوں کہ آپ ہمیں دھمکانا بند کریں اور سمجھداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے پابندیاں ہٹائیں۔ ہم بات چیت کے لئے تیار ہیں‘‘۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 15, 2019 01:17 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ایران نے کہا۔ امریکہ پابندی ہٹائے تو ہم بات چیت کے لئے تیار ہیں
حسن روحانی نے کہا- امریکہ معافی مانگے تو ایران مذاکرات کے لئے تیار

ایران نے کہا ہے کہ اگر امریکہ اس پر عائد پابندیوں کو ہٹاتا ہے تو وہ بات چیت کے لئے پوری طرح تیار ہے۔ خبر رساں ایجنسی مہر کے مطابق، ایران کے صدر حسن روحانی نے اتوار کے روز کہا کہ ’’ہم ہمیشہ سے بات چیت کے لئے تیار ہیں۔ میں آپ کو بتانا چاہتا ہوں کہ آپ ہمیں دھمکانا بند کریں اور سمجھداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے پابندیاں ہٹائیں۔ ہم بات چیت کے لئے تیار ہیں‘‘۔

اس سے قبل جرمنی، فرانس اور برطانیہ نے بین الاقوامی جوہری معاہدے کے تحت مشترکہ کارروائی منصوبہ (جے سی پی آر) کے تمام ارکان کی میٹنگ بلانے کا اعلان کیا۔ ان ممالک کے مطابق ایران پر امریکہ کے مسلسل پابندی لگانے اور ایران کے اس معاہدے کے التزامات کو توڑنے کی وجہ سے اس پر خطرہ منڈلا رہا ہے۔ روحانی نے کہا کہ ایران نے اپنی اسٹریٹجک تحمل کی پالیسی کو تبدیل کرکے جوابی کارروائی کی پالیسی اپنا لی ہے۔


گذشتہ ہفتے ایران نے بین الاقوامی جوہری معاہدے کے تحت یورینیم افزودگی کی طے شدہ حد سے تجاوز کر لیا ہے۔ ایران نے 3.67 فیصد کی مقررہ حد سے تجاوز کر کے اپنا یورینیم اضافہ 4.5 فیصد تک کر لیا ہے۔

First published: Jul 15, 2019 01:16 PM IST