உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایرانی صدرحسن روحانی کی مسئلہ کشمیر کے لئے ہند - پاک سے سفارتی حل کی اپیل

    ایرانی صدر حسن روحانی نے بدھ کے روز کابینہ کے اجلاس میں کہا کہ "ہمیں امریکہ کے ساتھ بات چیت کرنے میں کوئی دشواری نہیں ہے۔

    ایرانی صدر حسن روحانی نے بدھ کے روز کابینہ کے اجلاس میں کہا کہ "ہمیں امریکہ کے ساتھ بات چیت کرنے میں کوئی دشواری نہیں ہے۔

    حسن روحانی نے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان سے فون پر بات چیت میں کہا کہ کشمیر مسئلہ کوفوج کے ذریعہ نہیں حل نہیں کیا جاسکتا بلکہ اس کےلئے سفارتی طورپرپہل کی جانی چاہئے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      تہران:  کشمیر مسئلہ پر ہندستان اور پاکستان کے مابین بڑھتی کشیدگی کے درمیان ایران کے صدر حسن روحانی نے اتوار کو ودنوں پڑوسی ممالک سے اس معاملہ کا سفارتی حل نکالنے کی اپیل کی۔ حسن روحانی نے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان سے فون پر بات چیت میں کہا کہ کشمیرمسئلہ کوفوج کے ذریعہ نہیں حل نہیں کیا جاسکتا بلکہ اس کےلئے سفارتی طورپرپہل کی جانی چاہئے۔
      اسلامی ری پبلک نیوز ایجنسی نے ایران کے صدر حسن روحانی کے حوالے سے کہا کہ کشمیرمسئلہ کا کبھی کوئی فوجی حل نہیں ہوا ہے اور ہمیں سفارتی طورپرامورکو حل کرنا چاہئے۔ ایرانی صدرنے دعوی کیا کہ ان کے ملک نےعلاقہ میں کشیدگی اوربدامنی کوروکنے کےلئے ہمیشہ کوششیں کی ہیں۔
      خیال رہے کہ ہندستانی حکومت نے جموں وکشمیر کا خصوصی درجہ دینے سےمتعلق  آرٹیکل 370 اورآرٹیکل 35 اے کو ہٹا دیا اور پانچ اگست کو اپنے فیصلے میں اسے مرکز کے زیرانتظام دوریاستوں میں تقسیم کردیا ہے۔ اس کےبعد سے پاکستا ن بوکھلاہٹ میں مسلسل ہندوستان پرالزام لگا رہا ہے اورہندستان کے ساتھ اپنے سفارتی تعلقات کوبھی عارضی طورپر تو
      ڑدیا ہے۔
      First published: