உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Nuclear Deal: جوہری معاہدے کی بحالی، مزید سفارت کاری اور مذاکرات کا ایران کرےگاخیر مقدم

    تہران کا کہنا ہے کہ اس کا جوہری پروگرام پرامن ہے

    تہران کا کہنا ہے کہ اس کا جوہری پروگرام پرامن ہے

    امیرعبداللہیان نے ٹیلی فون پر یورپی یونین کے جوزپ بوریل کو بتایا کہ ایران سفارت کاری اور مذاکرات کے تسلسل کا خیرمقدم کرتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ کو اب یہ ظاہر کرنا چاہیے کہ وہ بھی معاہدے کا خواہاں ہے۔

    • Share this:
      ایران (Iran) کے سرکاری میڈیا نے بدھ کے روز وزیر خارجہ حسین امیرعبداللہیان (Hossein Amirabdollahian) کے حوالے سے بتایا کہ ایران عالمی طاقتوں کے ساتھ اپنے جوہری تنازع کو حل کرنے کے لیے سفارتی کوششوں کا خیرمقدم کرتا ہے۔ یورپی یونین کے اعلیٰ سفارت کار کی جانب سے تہران کے ساتھ 2015 کے جوہری معاہدے کو بحال کرنے کے لیے ایک نئے مسودے کی تجویز کے ایک دن بعد یہ بات سامنے آئی ہے۔

      امیرعبداللہیان نے ٹیلی فون پر یورپی یونین کے جوزپ بوریل کو بتایا کہ ایران سفارت کاری اور مذاکرات کے تسلسل کا خیرمقدم کرتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ کو اب یہ ظاہر کرنا چاہیے کہ وہ بھی معاہدے کا خواہاں ہے۔

      مزید پڑھیں: 

      مزید پڑھیں:


      انہوں نے کہا کہ امریکہ ہمیشہ یہ کہتا ہے کہ وہ ایک معاہدہ چاہتا ہے، لہذا اس نقطہ نظر کو معاہدے اور عملی طور پر دیکھا جانا چاہئے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: