உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہشت گرد تنظیم داعش کی آمدنی میں تیزی سے آ رہی ہے گراوٹ

    اسلامک اسٹیٹ: فائل فوٹو۔

    اسلامک اسٹیٹ: فائل فوٹو۔

    ماسکو۔ شام میں اسلامک اسٹیٹ(داعش) کے خلاف امریکی قیادت میں بین الاقوامی اتحادی افواج اور روس کی فضائیہ کے ہوائی حملوں نے اس دہشت گرد تنظیم کی معیشت کو مفلوج کر دیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      ماسکو۔ شام میں اسلامک اسٹیٹ(داعش) کے خلاف امریکی قیادت  میں بین الاقوامی اتحادی افواج اور روس کی فضائیہ کے ہوائی حملوں نے اس دہشت گرد تنظیم کی معیشت کو مفلوج کر دیا ہے۔ گزشتہ سال کے جون سے اب تک داعش کی آمدنی میں 30 فیصد تک کی کمی آئی ہے۔ داعش کے قبضے والے علاقوں کے بارے میں باقاعدہ رپورٹ دینے والی ایک فرم آئی ایچ ایس نے اپنی تازہ رپورٹ میں بتایا ہے کہ دہشت گرد تنظیم کو سب سے زیادہ انکم ٹیکس، جائیداد اور کاروبار پر قبضہ کرنے سے ہوتی ہے۔ اس کے بعد اس کی آمدنی کا تقریبا 43 فیصد حصہ تیل کی پیداوار اور اسمگلنگ کا ہے۔


      رپورٹ کے مطابق آئی ایس کو گزشتہ 15 ماہ میں اپنے 22 فیصد سے زیادہ علاقے سے بھاگنا پڑا ہے۔داعش کے خلاف جاری مہم میں روس گذشتہ سال ستمبر میں شام کی حکومت کی گزارش پر شامل ہوا ہے۔ فرم کے سینئر تجزیہ کار لڈوویكو كارلینو کے مطابق گزشتہ سال کے وسط میں داعش کو 80 کروڑ ڈالر کی ماہانہ آمدنی ہوتی تھی لیکن اب یہ گر کر 56 کروڑ ڈالر رہ گئی ہے۔ اسی مدت میں اس کے تیل کی پیداوار روزانہ 33 ہزار بیرل سے گر کر 22 ہزار بیرل ہو گئی ہے۔


      رپورٹ کے مطابق فضائی حملوں میں ہونے والے بھاری نقصان کا سبب بن رہے اقتصادی نقصان کی تلافی کے لئے داعش کو نئے نئے ٹیکس لگانے پڑ رہے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق داعش کے قبضے والے علاقوں میں رہنے والے لوگوں کو اب قرآن کے بارے میں پوچھے گئے سوالات کے درست جواب نہیں دینے پر اور سڑک پر غلط سمت سے چلنے پر بھی بھاری جرمانہ ادا کرنا پڑ رہا ہے۔

      First published: