ہوم » نیوز » عالمی منظر

آئی ایس کا عجیب ویڈیو: بچوں سے کرایا کرد جنگجوؤں کا قتل

لندن۔ دنیا کی سب سے زیادہ سفاک دہشت گرد تنظیموں میں سے ایک اسلامک اسٹیٹ نے روح تڑپا دینے والا ایک نیا ویڈیو جاری کیا ہے جس میں ایک برطانوی لڑکے اور چار دوسرے بچے شام میں قیدی بنائے گئے کرد جنگجوؤں کا بے رحمی سے قتل کرتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Aug 27, 2016 06:01 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
آئی ایس کا عجیب ویڈیو: بچوں سے کرایا کرد جنگجوؤں کا قتل
علامتی تصویر

لندن۔ دنیا کی سب سے زیادہ سفاک دہشت گرد تنظیموں میں سے ایک اسلامک اسٹیٹ نے روح تڑپا دینے والا ایک نیا ویڈیو جاری کیا ہے جس میں ایک برطانوی لڑکے اور چار دوسرے بچے شام میں قیدی بنائے گئے کرد جنگجوؤں کا بے رحمی سے قتل کرتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔ ’ڈیلی میل‘ میں شائع رپورٹ میں دکھائے گئے نو منٹ کے اس خوفناک ویڈیو کو حال ہی میں شام کے دارالحکومت رككا میں ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ویڈیو دیکھ کر پتہ چل رہا ہے کہ رككا سے بھگائے جانے کے بعد آئی ایس اب پہلے سے اور زیادہ ظالم ہو گیا ہے۔


ویڈیو میں فوج کی وردی پہنے پانچ بچے دکھائی دے رہے ہیں، جنہوں نے ہاتھ میں بندوق لے رکھی ہے۔ مانا جا رہا ہے کہ یہ لڑکے برطانیہ، مصر، ترکی، تیونس اور ازبکستان کے ہیں۔

ایک آدمی عربی میں کچھ بول رہا ہے اور اس نے ایک قیدی کے سر پر تھپڑ مارا۔ اس کے بعد تمام لڑکوں نے اپنی بندوق اٹھائی اور پانچوں کرد جنگجوؤں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ آئی ایس نے اپنی ناپاک حرکتوں کو انجام دینے کے لئے اب بچوں کو ہتھیار بنا لیا ہے۔


'دی سن' اخبار کے مطابق برطانوی لڑکےکی شناخت ابو عبداللہ البرطانوی کے طور پر ہوئی ہے۔ گورے رنگ اور نیلی آنکھوں والے اس لڑکے کی عمر تقریبا 12 سال ہے۔  ظاہر ہوتا ہے کہ یہ لڑکا نوجوان برطانوی دہشت گرد عبداللہ البرطانوی کا بیٹا ہو سکتا ہے جس نے شام میں شادی کی تھی اور بعد میں ایک ڈرون حملے میں مارا گیا تھا۔'دی ٹائمز' کے مطابق ایک آدمی عربی میں کہہ رہا ہے، "کوئی امریکہ، فرانس، برطانیہ، جرمنی اور جہنم کے شیطانوں کی مدد سے بھی کردوں کو نہیں بچا سکتا‘‘۔ اس کے بعد باقی سب لڑکوں نے 'اللہ اکبر' کہہ کر آسمان میں گولیاں چلائیں اور پھر تمام کرد قیدیوں کو مار ڈالا۔ ان لاشوں پر بعد میں سر پر گولی کے نشانات نظر آئے۔ 


یہ بچے ان پانچ دہشت گردوں کی نقل کرتے ہوئے دکھائی دے رہے تھے، جنہوں نے سنتری کا جمپ سوٹ پہن کر سر قلم کیا تھا۔ شام اور عراق میں بہت سے برطانوی شہریوں کے آئی ایس میں شامل ہونے کا خدشہ ہے۔ جنگجوؤں کی تعداد میں کمی آنے کے بعد اب آئی ایس بچوں کا سہارا لے رہا ہے۔ وہ ان بچوں کے دماغ میں انتہا پسندی بھر رہا ہے اور انسانی بم کے طور پر ان کا استعمال کر رہا ہے۔ وہ بچوں کو جہادی مہمات کا ویڈیو دکھا کر ان کاد ماغ بدل  رہا ہے۔


First published: Aug 27, 2016 06:01 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading