உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان: اسلامک اسٹیٹ نے لی کابل خودکش بم حملہ کی ذمہ داری

    کابل میں ہوئے خود کش حملہ کی تصویر: رائٹر

    کابل میں ہوئے خود کش حملہ کی تصویر: رائٹر

    دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) نے کابل میں خود کش بم حملے کو انجام دینے کی ذمہ داری لی ہے۔ آئی ایس نیوز ایجنسی اماک نے یہ اطلاع دی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس) نے کابل میں خود کش بم حملے کو انجام دینے کی ذمہ داری لی ہے۔ آئی ایس نیوز ایجنسی اماک نے یہ اطلاع دی ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، آئی ایس نے کہا ہے کہ افغانستان کے جلاوطن نائب صدر عبد الرشید دوستم کو نشانہ بنا کر دارالحکومت کابل ہوائی اڈے کے قریب کئے گئے خود کش بم حملے کو انجام دیا گیا۔ نائب صدر کے استقبال میں خودکش حملہ آور کو دھماکہ خیز مادوں سے بھری جیکٹ دی گئی۔ فدائین حملہ آور نے مسٹر دوستم کی آمد کے موقع پر منايے جا رہے جشن کے درمیان دھماکے کرکے خود کو اڑا لیا۔ اس کے علاوہ آئی ایس نے اس سلسلے میں کوئی دوسری تفصیلات نہیں بتائیں۔

      دوستم اتوار کو وطن لوٹنے کے تھوڑی دیر بعد دارالحکومت کابل کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب ایک خود کش حملے میں بال بال بچ گئے تھے لیکن حملے میں کم از کم 14 افراد کی موت اور 50 سے زائد زخمی ہو گئےتھے۔ پولیس نے بتایا کہ کابل کے حامد کرزئی بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب جس وقت یہ خود کش حملہ ہوا اس وقت دوستم سرکاری حکام اور حامیوں کی ایک بڑی بھیڑ کے ساتھ ہوائی اڈے سے نکل رہے تھے۔

      دوستم کے ترجمان بشیر احمد تيانز نے بتایا کہ دوستم کا قافلہ نکلنے کے دوران دھماکے کی آواز سنائی دی۔ وہ بکتر بند گاڑی سے چل رہے تھے اور محفوظ ہیں۔ قابل غور ہے کہ دوستم انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے الزامات کی وجہ سے گزشتہ سال مئی سے ترکی میں تھے۔
      First published: