ہوم » نیوز » عالمی منظر

Israel-Palestine conflict:غزہ میں اسرائیلی فوج کی بربریت جاری،مغربی کنارےتک پھیل گئیں جھڑپیں

اسرائیلی فوج اپنی پرتشدد کارروائیوں کو مغربی کنارے (West Bank) میں بھی جاری رکھی ہوئی ہے۔ یہاس کے کشیدہ علاوقوں میں کم از کم 10 فلسطینیوں کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں، جبکہ سیکڑوں زخمی ہوئے ہیں۔

  • Share this:
Israel-Palestine conflict:غزہ میں اسرائیلی فوج کی بربریت جاری،مغربی کنارےتک پھیل گئیں جھڑپیں
اسرائیلی فوج نے فلسطینی مسلمانوں کو ان کے آبائی مکانات خالی کردینے کے لیے کہا ہے۔(تصویر: اے ایف پی )۔

مغربی کنارے (West Bank): غزہ میں اسرائیلی فوج کی جانب سے مسلسل تشدد اور بمباری کے بعد یہ تشدد مقبوضہ مغربی کنارے (West Bank) کے بیشتر حصے میں بھی پھیل گیا ہے۔ اسرائیلی فوج کی جانب سے تشدد اور اسحلوں کے بے دریغ استعمال پر فلسطینی اپنی حفاظت (West Bank) کے طور پر اسرائیلی فوج سے نبرد آزما ہے۔اسرائیلی فوج اپنی پرتشدد کارروائیوں کو مغربی کنارے (West Bank) میں بھی جاری رکھی ہوئی ہے۔ یہاس کے کشیدہ علاوقوں میں کم از کم 10 فلسطینیوں کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں، جبکہ سیکڑوں زخمی ہوئے ہیں۔اسرائیلی فوج نے آنسو، ربڑ کی گولیوں اور زندہ آگ کا استعمال کیا، جب کہ فلسطینیوں نے پیٹرول بم پھینکے۔


اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کا اندیشہ بڑھتا ہی جارہا ہے ۔(تصویر: اے ایف پی )۔
اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کا اندیشہ بڑھتا ہی جارہا ہے ۔(تصویر: اے ایف پی )۔


  • بدترین تشدد کے واقعات


مغربی کنارے میں محاذ آرائیوں نے گذشتہ کئی برسوں سے اس خطے میں بدترین تشدد کے واقعات کو بڑھاوا دیا ہے۔

یہ تنازعہ پیر کے روز شروع ہوا۔ مشرقی یروشلم میں کشیدگی پھیلانے اور فلسطینیوں کو ان کے آبائی مقامات سے بے دخل کرنے کے لیے اسرائیلی فوج پیش پیش ہیں۔ اس طرح کا تشدد اب بھی جاری ہے۔ بڑھتی ہوئی دشمنی کا اختتام ایک مقدس مقام پر جھڑپوں کے نتیجے میں ہوا۔

اسرائیلی فوج نے فلسطینی مسلمانوں کو ان کے آبائی مکانات خالی کردینے کے لیے کہا ہے۔ وہیں غزہ سے پیچھے ہٹنے کے انتباہ کے بعد راکٹ فائر بھی کیا گیا، اور انتقامی ہوائی حملوں کا آغاز کیا۔

لڑائی شروع ہونے کے بعد سے غزہ میں کم از کم 126 افراد فلسطینی مسلمان ہوئے ہیں اور اسرائیل میں آٹھ ہلاک ہوگئے ہیں۔

اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کا اندیشہ بڑھتا ہی جارہا ہے ۔ حماس سے لڑنے کیلئے اسرائیل نے غزہ کی سرحد پر بڑی تعداد  میں فوجیوں کو بھیجا ہے اور 9000 فوجیوں کو تیار رہنے کیلئے کہا ہے ۔ غزہ پر حماس کا کنٹرول ہے ۔ اس درمیان مسلم ممالک کی تنظیم آرگنائزیشن آف اسلامک کو آپریشن نے 16 مئی کو 57 اراکین ممالک کے وزرائے خارجہ کی میٹنگ بلائی ہے ۔ او آئی سی نے ٹویٹ کرکے کہا کہ یہ میٹنگ سعودی عرب کی درخواست پر بلائی گئی ہے ۔

حماس سے لڑنے کیلئے اسرائیل نے غزہ کی سرحد پر بڑی تعداد  میں فوجیوں کو بھیجا ہے اور 9000 فوجیوں کو تیار رہنے کیلئے کہا ہے ۔۔(تصویر: اے ایف پی )۔
حماس سے لڑنے کیلئے اسرائیل نے غزہ کی سرحد پر بڑی تعداد میں فوجیوں کو بھیجا ہے اور 9000 فوجیوں کو تیار رہنے کیلئے کہا ہے ۔۔(تصویر: اے ایف پی )۔


  • اسرائیلی فوج کی جانب سے راکٹ حملے:


اس سے پہلے اسرائیل نے غزہ میں جمعہ کو علی الصبح اپنے توپ خانے سے بھاری گولہ باری کی ، جس کے بعد کئی فلسطینیوں نے اپنے بچوں اور سامان کے ساتھ یہ علاقہ چھوڑ دیا ۔ حملے میں ایک ہی کنبہ کے چھ اراکین اپنے گھر میں ہی جاں بحق ہوگئے ۔ حماس نے تقریبا 1800 راکٹ داغے اور فوج نے 600 سے زیادہ ہوائی حملے کئے ، جس میں کم سے کم تین عمارتیں منہدم ہوگئیں ۔

بین الاقوامی سطح پر جنگ بندی کی کوششوں کے باوجود اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کا اندیشہ بڑھتا جارہا ہے ۔ اسرائیل میں چوتھی رات بھی اندرونی تشدد ہونے کے بعد لڑائی مزید تیز ہوگئی ہے ۔ یہودی اور عرب گروپوں میں لاڈ شہر میں جھڑپیں ہوئیں ۔ پولیس کی موجودگی بڑھانے کے حکم کے باوجود یہ جھڑپیں ہوئیں ۔ غزہ شہر کے باہری علاقوں میں دھماکوں کی وجہ سے آسمان میں دھنویں کے غبارے دیکھے گئے ۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 15, 2021 09:26 AM IST