உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Israel-Palestine: اسرائیل-فلسطین تنازعہ کے دوران آج عارضی جنگ بندی کیلئے رضامندی، غزہ کے شہری بے حال و پریشان

     اسرائیل نے ایک پورے شہر پر اپنی بمباری کی ہے۔ (تصویر: twitter)

    اسرائیل نے ایک پورے شہر پر اپنی بمباری کی ہے۔ (تصویر: twitter)

    اتوار کی رات اسرائیل اور اسلامی جہاد کے درمیان ممکنہ جنگ بندی کے بارے میں متضاد اطلاعات ہیں۔ قبل ازیں ذرائع نے الجزیرہ کو بتایا تھا کہ آنے والے گھنٹوں میں جنگ بندی کا اعلان کیا جائے گا۔ لیکن الجزیرہ کے صفوت الکہلوت کے مطابق اسلامی جہاد کے ایک اور اہلکار نے کہا کہ ابھی تک کسی چیز پر اتفاق نہیں ہوا ہے۔

    • Share this:
      برطانیہ میں فلسطین کے سفیر حسام زوملوٹ (Husam Zomlot) نے کہا ہے کہ اسرائیل (Israel) کا غزہ (Gaza) پر پیشگی حملہ ایک ’جنگی جرم‘ ہے۔ امریکہ اور برطانیہ جیسے ممالک کے اسرائیل نواز بیانات اسرائیل کو اپنے حملے جاری رکھنے کے لیے ’منظوری دینے‘ کے برابر ہیں۔ سفیر حسام زوملوٹ نے بتایا کہ آپ نے ایک پورے شہر پر اپنی بمباری کی بنیاد رکھی ہے جو کہ محصور غزہ ہے جو پچھلے 16 سال سے ہر اعتبار سے ایک طرح کا کھلا قید خانہ بن گیا ہے۔ جو کہ زمین سے محصور ہے، سمندر سے محصور ہے اور اور آپ معلومات کے بہانے ہر وقت ان پر حملہ کرتے ہیں۔ یہ جنگی جرم ہے۔

      انھوں نے کہا کہ بین الاقوامی قانون کے تحت یہاں صرف وہی لوگ ہیں جن کے حقوق ہیں۔ لیکن یہاں زیادہ تر مقبوضہ لوگ ہیں۔ انہیں اپنی سرزمین کے دفاع کے لیے اپنے اور اپنے بچوں اور خاندانوں کا دفاع کرنے کا حق حاصل ہے اور اسی لیے اسرائیل کے اپنے دفاع کے حق کی یہ ساری باتیں اسرائیل کے جنگی جرائم کے تائید کے برابر ہے۔

      غزہ میں زندگی رک سی گئی!

      غزہ سے الجزیرہ کی صفوت الکہلوت کی رپورٹنگ میں کہا گیا ہے کہ لوگ جلد ہی جنگ بندی کے "انتظار" کر رہے ہیں کیونکہ جمعہ سے جاری اسرائیل کے حملے کے دوران زندگی مکمل طور پر رک گئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ انسانی حالات ابتر ہوتے جا رہے ہیں اور کل بجلی گھر بند ہونے کے بعد سے لوگ صرف چار گھنٹے بجلی میں زندگی گزار رہے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      Islamic Jihad: فلسطینی اسلامی جہاد کیا ہے؟ اسرائیل کیوں بنا رہا ہے اسے خاص نشانہ؟

      اسرائیلی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ اتوار کے روز ایک فلسطینی مارٹر بم حملے سے بند اسرائیل-غزہ ایریز بارڈر کراسنگ (Israel-Gaza Erez border crossing) کو نقصان پہنچا۔ وزارت دفاع نے کہا کہ آگ کے نتیجے میں ٹرمینل کی چھت کو نقصان پہنچا اور جھرنا داخلی ہال میں گر گیا، یہ ایک ایسا علاقہ ہے جو اسرائیل میں کام کرنے والے ہزاروں غزہ باشندوں کے روزانہ گزرنے کی سہولت کے لیے استعمال ہوتا ہے۔ ابھی تک وہاں کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Israel bombs Gaza: ’یہ یوکرئن نہیں غزہ ہے‘ غزہ پر اسرائیلی بمباری سے فلسطینی عوام میں شدید بے چینی!

      جنگ بندی معاہدے پر متضاد اطلاعات:

      اتوار کی رات اسرائیل اور اسلامی جہاد کے درمیان ممکنہ جنگ بندی کے بارے میں متضاد اطلاعات ہیں۔ قبل ازیں ذرائع نے الجزیرہ کو بتایا تھا کہ آنے والے گھنٹوں میں جنگ بندی کا اعلان کیا جائے گا۔ لیکن الجزیرہ کے صفوت الکہلوت کے مطابق اسلامی جہاد کے ایک اور اہلکار نے کہا کہ ابھی تک کسی چیز پر اتفاق نہیں ہوا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: