ہوم » نیوز » عالمی منظر

اسرائیل۔فلسطین کی جنگ میں منگیتر نے اڑایا پاکستان کا مذاق تو گرل فرینڈ نے اٹھالیا یہ سخت قدم

ان کے اس پوسٹ کے بعد زویا اختر نے منگنی توڑ دی۔ اس سلسلے میں انہوں نے ایک پوسٹ بھی کیا۔ اس میں انہوں نے لکھا، میرے مذہب، میری ثقافت، میرے ملک اور میرے لوگوں کے لئے جو بے حسی ظاہر کی گئی ہے اس نے اچانک میرا رخ بدل دیا۔

  • Share this:
اسرائیل۔فلسطین کی جنگ میں منگیتر نے اڑایا پاکستان کا مذاق تو گرل فرینڈ نے اٹھالیا یہ سخت قدم
ان کے اس پوسٹ کے بعد زویا اختر نے منگنی توڑ دی۔ اس سلسلے میں انہوں نے ایک پوسٹ بھی کیا۔ اس میں انہوں نے لکھا، میرے مذہب، میری ثقافت، میرے ملک اور میرے لوگوں کے لئے جو بے حسی ظاہر کی گئی ہے اس نے اچانک میرا رخ بدل دیا۔

نئی دہلی: اسرائیل اور فلسطین (Israel Palestine War) کے درمیان چل رہے تناؤ پر پوری دنیا کی نظر ہے۔ اسرائیل نے جنگ بندی سے کچھ دن پہلے حماس کے شدت پسندوں کے متعدد ٹھکانوں کو کچھ دنوں تک بمباری کرکے تباہ کیا ہے۔ کئی ایسے ممالک ہیں جو اس دوران اسرائیل اور فلسطین کے درمیان جنگ میں بیان بازی کر رہے ہیں۔ ان میں سے ایک پاکستان (Pakistan) بھی ہے۔ ادھر پاکستانی اداکارہ نے اس معاملے میں پاکستان کا مذاق اڑائے جانے کے بعدوہاں کی اداکارہ نے اپنے بوائے فرینڈ سے منگنی توڑ لی ہے۔


منگنی توڑنے والی اداکارہ کا نام زویا ناصر ہے۔ وہ اپنے بوائے فرینڈ اور جرمن بلاگر کرشچین بیٹس مین کے ساتھ سگائی کرنے جا رہی تھی۔  اس درمیان کرشچین نے اسرائیل اور فلسطین کے تناؤ کے بیچ پاکستان پر ایک تبصرہ کر دی۔ انہوں نے دراصل ایک ٹویٹ میں پاکستان کا مذاق اڑا دیا۔ اس سے ان کی منگیتر زویا ناصر غصہ ہو گئیں اور انہوں نے منگنی توڑ دی۔ اب دونوں الگ ہیں۔


کرشچین نے لکھا تھا، موجودہ وقت میں دعا کرنے سے کام نہیں چالے گا۔ اسرائیل نے فلسطین کی حمایت میں آواز اٹھانے والے پاکستانیوں پر بھی سوال اٹھائے ہیں۔ جب آپ اپنے ہی ملک کو برباد کر رہے ہوں۔ جب آپ  اپنے سماج اور لوگوں کی مدد نہیں کر پا رہے ہیں تو ایسے میں دوسروں کیلئے برا محسوس کرنا بند کریں۔


ان کے اس پوسٹ کے بعد زویا اختر نے منگنی توڑ دی۔ اس سلسلے میں انہوں نے ایک پوسٹ بھی کیا۔ اس میں انہوں نے لکھا، میرے مذہب، میری ثقافت، میرے ملک اور میرے لوگوں کے لئے جو بے حسی ظاہر کی گئی ہے اس نے اچانک میرا رخ بدل دیا۔ اس نے مجھے یہ مشکل فیصلہ لینے کیلئے مجبور کر دیا ہے۔ کچھ مذہبی اور مساجی حدیں ہوتی ہیں جنہیں نہیں کیا جا سکتا۔ اس لئے میں نے الگ ہونے کا فیصلہ کیا۔ ، رواداری اور ایک دوسرے کے لئے احترام وہ خصوصیات ہیں جن کی ہمیں ہمیشہ پیروی کرنی چاہئے۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 29, 2021 05:56 PM IST