ہوم » نیوز » عالمی منظر

غزہ میں کثیر منزلہ عمارتوں پر اسرائیل کا فضائی حملہ ، کئی بین الاقوامی میڈیا ہاوس کے دفاتر تباہ

اسرائیل نے اپنے فضائی حملہ میں غزہ سٹی میں واقع اس کثیر منزلہ عمارت کو منہدم کردیا ہے ، جہاں سے الجزیرہ ، ایسوسی ایٹیڈ پریس اور دیگر انٹرنیشنل میڈیا آوٹ لیٹس کام کررہے تھے ۔

  • Share this:
غزہ میں کثیر منزلہ عمارتوں پر اسرائیل کا فضائی حملہ ، کئی بین الاقوامی میڈیا ہاوس کے دفاتر تباہ
غزہ میں کثیر منزلہ عمارتوں پر اسرائیل کا فضائی حملہ ، کئی بین الاقوامی میڈیا ہاوس کے دفاتر تباہ (Al Jazeera)

یروشلم : اسرائیلی فوج کے ہوائی حملے میں ہفتہ کو غزہ شہر میں واقع ایک کثیر منزلہ عمارت منہدم ہوگئی ، جس میں ایسوسی ایٹیڈ پریس اور دیگر میڈیا اداروں کے دفاتر واقع تھے ۔ اسرائیلی فوج کے اس حالیہ قدم کو حماس کے ساتھ جاری اس کی لڑائی کے سلسلہ میں غزہ کی زمینی سطح کی اطلاعات کو سامنے لانے سے روکنے کی کوشش کے طور پر دیکھا جارہا ہے ۔ فوج کے ذریعہ عمارت کو خالی کرنے کا حکم دئے جانے کے ایک گھنٹے کے بعد ہی یہ حملہ ہوا ۔ اس عمارت میں رہائشی اپارٹمنٹ ہونے کے ساتھ ہی اے پی ، الجزیرہ سمیت کئی اداروں کے دفاتر تھے ۔


اس حملے میں 12 منزلہ عمارت زمین دوز ہوگئی اور چاروں طرف دھول ہی دھول نظر آیا ۔ اس سلسلہ میں فوری کوئی وضاحت سامنے نہیں آئی کہ اس عمارت کو نشانہ کیوں بنایا گیا ؟ ۔ میڈیا اداروں کے دفاتر جس عمارت میں تھے ، اس پر دوپہر کو ہوئے حملے سے پہلے اسرائیلی فوج نے عمارت کے مالک کو فون کرکے اس کو نشانہ بنائے جانے کی وارننگ دی تھی ۔ اس کے بعد اے پی کے اہلکار اور دیگر لوگوں نے فورا عمارت کو خالی کردیا ۔ قطر سرکار کے ذریعہ انسپانسرڈ الجزیرہ نیوز نیٹ ورک نے اس عمارت پر ہوئے حملے اور اس کے زمین دوز ہونے کو براہ راست نشر کیا ۔




اسرائیل نے حماس کے راکٹ لانچر کو تباہ کیا

اسرائیل کی فضائیہ نے یروشلم میں فلسطینی گروپ حماس کی راکٹ لانچ کرنے والی جگہ کو تباہ کردیا ہے ۔ اسرائیل کے وزیراعظم کے ترجمان اوفرگینڈلمین نے سنیچر کو یہ اطلاع دی۔ گینڈل مین نے ٹوئٹ کیا کہ اسرائیلی فضائیہ نے کل رات اس راکٹ لانچر کو تباہ کردیا ، جس کا استعمال حماس کے اراکین نے گزشتہ پیر کو یروشلم میں راکٹ داغنے کے لئے کیا تھا۔

اسرائیل اور فلسطین کشیدگی کم کریں : اقوام متحدہ

ادھراقوام متحدہ کی ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق مشیل بیچلیٹ نے ہفتہ کے روزبین الاقوامی قانون کا سخت احترام کرنے پر روز دیتے ہوئے تمام فریقین سے اسرائیل اور مقبوضہ فلسطین کے علاقے میں پیداشدہ کشیدگی کو کم کرنے کے لئے اقدامات کرنے کی اپیل کی ۔ بیچلیٹ نے ایک بیان میں کہا کہ گزشتہ 10 دنوں میں مقبوضہ فلسطینی علاقوں اور اسرائیل میں صورتحال تشویشناک ہے ۔ مشرقی یروشلم کے مقبوضہ شیخ جرح کی صورتحال ، فلسطینی کنبوں کو زبردستی بے دخل کرنے کی دھمکیاں ، رمضان المبارک کے دوران مسجد اقصیٰ کے آس پاس تشدد کے واقعات ، اسرائیلی سیکورٹی فورسز کی بھاری موجودگی اور غزہ اور اس کے اوپر حملوں میں اضافے سے مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں اور اسرائیل میں خطرناک حملوں سے ہلاکتوں میں اضافہ ہوا ہے۔

بیچلیٹ نے یہ بھی خبردار کیا کہ فلسطینی مسلح گروپوں کی طرف سے بڑی تعداد میں اسرائیل بالخصوص گنجان آبادی والے علاقوں میں اندھا دھند راکٹ فائر کرنا بین الاقوامی قانون کی واضح خلاف ورزی ہے ، جو جنگی جرائم کے مترادف ہے۔

بتادیں کہ اسرائیل اور فلسطین کے درمیان جاری لڑائی کے درمیان سنیچر کی صبح تک غزہ پٹی سے اسرائیلی علاقہ میں 2,200 سے زیادہ راکٹ داغے گئے ہیں۔ اسرائیل نے بھی غزہ پٹی میں حماس کے ٹھکانوں پر کئی حملے کئے ہیں۔

نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 15, 2021 11:55 PM IST