உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اسرائیلی فوج کے ہاتھوں چار فلسطینی ہلاک، شہر جنین میں عوام کے اندر شدید غم و غصہ

    مشرقی یروشلم بشمول مسجد اقصیٰ میں جھڑپوں کی اطلاع ہے۔

    مشرقی یروشلم بشمول مسجد اقصیٰ میں جھڑپوں کی اطلاع ہے۔

    اسرائیلی افواج نے آپریشن کی تصدیق کی اور کہا کہ یہ حالیہ فائرنگ میں ملوث دو مشتبہ افراد کو گرفتار کرنے کے لیے شروع کیا گیا تھا۔ یہ چھاپہ یروشلم میں اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کے درمیان شدید کشیدگی کے درمیان ہوا ہے، وہیں مشرقی یروشلم بشمول مسجد اقصیٰ میں جھڑپوں کی اطلاع ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, IndiaPalestinePalestinePalestine
    • Share this:
      بدھ کے روز مغربی کنارے کے شہر جنین (Jenin) میں اسرائیلی فوج کے چھاپے میں کم از کم چار فلسطینی مارے گئے، جن میں اس سال کے شروع میں تل ابیب میں تین افراد کو ہلاک کرنے والے بندوق بردار کا بھائی بھی شامل ہے۔ فلسطینی اتھارٹی کی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ 44 افراد زخمی ہوئے ہیں اور متعدد کی حالت تشویشناک ہے۔ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ چار افراد مارے گئے، لیکن اسرائیلی فوج نے جنین کے پناہ گزین کیمپ پر چھاپے میں دو ہلاکتوں کا اعلان کیا۔

      مرنے والوں میں سے ایک راد حازم کا بھائی عابد حازم (Abed Hazem) ہے، جس نے اپریل میں وسطی تل ابیب میں ایک بندوق کے حملے میں تین افراد کو ہلاک کر دیا تھا۔ مسلح شخص کو جافا میں ایک بار میں فائرنگ کے بعد ہلاک کر دیا گیا۔ اس سال کے شروع میں اسرائیل میں فلسطینی حملوں کی لہر کے بعد اسرائیلی فوج نے جنین اور مغربی کنارے کے اس پار چھاپہ مار کارروائیاں تیز کر دی ہیں۔

      اسرائیلی افواج نے آپریشن کی تصدیق کی اور کہا کہ یہ حالیہ فائرنگ میں ملوث دو مشتبہ افراد کو گرفتار کرنے کے لیے شروع کیا گیا تھا۔ یہ چھاپہ یروشلم میں اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کے درمیان شدید کشیدگی کے درمیان ہوا ہے، وہیں مشرقی یروشلم بشمول مسجد اقصیٰ میں جھڑپوں کی اطلاع ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      اسرائیلی اخبار ہاریٹز میں اس ماہ کے شروع میں شائع ہونے والی رپورٹ میں کہا گیا کہ اس سال مغربی کنارے میں فلسطینیوں کی ہلاکتوں کی تعداد سات سال میں سب سے زیادہ ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: