உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کا نیا حربہ، ہندوستان کی جاسوسی کے لئے تیار کی خوبصورت لڑکیوں کی ’پلٹن‘، دیا یہ ٹاسک

    پاکستان خوبصورت لڑکیوں سے ہندوستان کی جاسوسی کروا رہا ہے۔ ہندوستان کے ہاتھوں بار بار مات کھاچکے پاکستان (Pakistan) نے اب ہندوستانی کی جاسوسی کے لئے خوبصورت لڑکیوں (Beautiful girls) کی پلٹن تیار کی ہے۔ اس کا انکشاف حال ہی میں ہنی ٹریپ کے شکار ہوئے ہندوستانی فوج کے جوان سے خفیہ ایجنسیوں کی ہوئی پوچھ گچھ اور پڑتال میں ہوا ہے۔ پڑھیں کیا ہے پاکستان کی نئی چال اور اس کا پروجیکٹ شیرنی‘۔

    پاکستان خوبصورت لڑکیوں سے ہندوستان کی جاسوسی کروا رہا ہے۔ ہندوستان کے ہاتھوں بار بار مات کھاچکے پاکستان (Pakistan) نے اب ہندوستانی کی جاسوسی کے لئے خوبصورت لڑکیوں (Beautiful girls) کی پلٹن تیار کی ہے۔ اس کا انکشاف حال ہی میں ہنی ٹریپ کے شکار ہوئے ہندوستانی فوج کے جوان سے خفیہ ایجنسیوں کی ہوئی پوچھ گچھ اور پڑتال میں ہوا ہے۔ پڑھیں کیا ہے پاکستان کی نئی چال اور اس کا پروجیکٹ شیرنی‘۔

    پاکستان خوبصورت لڑکیوں سے ہندوستان کی جاسوسی کروا رہا ہے۔ ہندوستان کے ہاتھوں بار بار مات کھاچکے پاکستان (Pakistan) نے اب ہندوستانی کی جاسوسی کے لئے خوبصورت لڑکیوں (Beautiful girls) کی پلٹن تیار کی ہے۔ اس کا انکشاف حال ہی میں ہنی ٹریپ کے شکار ہوئے ہندوستانی فوج کے جوان سے خفیہ ایجنسیوں کی ہوئی پوچھ گچھ اور پڑتال میں ہوا ہے۔ پڑھیں کیا ہے پاکستان کی نئی چال اور اس کا پروجیکٹ شیرنی‘۔

    • Share this:
      جے پور: دہشت گردی کے معاملے میں اور سرحد پر منہ کی کھانے کے بعد پاکستان نے اب ہندوستان سے چھدم جنگ کا نیا آپریشن شروع کیا ہے۔ پاکستانی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی (Pakistani intelligence agency ISI) اب ہندوستان میں جاسوسی کے لئے خاتون ایجنٹس کی بھرتی کر رہی ہے۔ اب تک 300 خاتون ایجنٹس کو بھرتی کیا جاچکا ہے۔

      آئی ایس آئی کی سب سے زیادہ توجہ کشمیر پر ہے۔ کشمیر کے لئے آئی ایس آئی نے الگ سے خاتون ایجنٹس کا کال سینٹر بنایا ہے۔ پاکستان کی خاتون ایجنٹس کے اس بڑے آپریشن کا انکشاف حال ہی میں ہنی ٹریپ (Honeytrap) کے شکار ہوئے جودھپور میں تعینات فوج کے جوان پردیپ سے خفیہ ایجنسیوں کی پوچھ گچھ میں ہوئی ہے۔

      آئی ایس آئی نے ہندوستان میں خاتون ایجنٹس سے جاسوسی کروانے کے اس آپریشن کو نام دیا ’پروجیکٹ شیرنی‘۔ آئی ایس آئی نے ہندوستانی سرحد پر جاسوسی کے لئے جونوار کال سینٹر بنائے ہیں۔ کشمیر میں جاسوسی کے لئے پاکستان کے میر پور، گجرات سرحد پر جاسوسی کے لئے کراچی میں، پنجاب وجموں میں جاسوسی کے لئے لاہور اور راولپنڈی میں یہ کال سینٹر بنائے ہیں۔ راجستھان میں جاسوسی کے لئے لاہور اور راولپنڈی میں یہ کال سینٹر بنائے ہیں۔ راجستھان میں جاسوسی کے لئے پاکستان کے سندھ علاقے میں واقع حیدرآباد میں کال سینٹر بنایا گیا ہے۔

      180 دن کی آن لائن اور ڈارک ویب کی ٹریننگ دی جاتی ہے

      ان خاتون جاسوسوں کو بھرتی کرنے کے بعد انہیں 180 دنوں کی آن لائن اور ڈارک ویب کی ٹریننگ دی گئی۔ انہیں ہنی ٹریپ کی اسپیشل ٹریننگ دی جارہی ہے۔ ٹریننگ کے بعد ہر خاتون ایجنٹ کو 50 ہندوستانی پروفائل دی جاتی ہیں۔ خاتون ایجنٹسن کو ان پروفائل والے شخص کو ہنی ٹریپ کے جال میں پھنساکر خفیہ اطلاعات حاصل کرنی ہوتی ہیں۔ دراصل، آئی ایس آئی نے سب سے پہلے اس کی شروعات 2019 میں آپریشن حیدرآباد سے کی تھی۔ سندھ سے غریب لڑکیوں، مقامی کال گرل اور کالج کی لڑکیوں کی خاتون ایجنٹ کے لئے ہائرنگ شروع کی گئی تھی۔ ان خاتون ایجنٹس کو ٹریننگ کے بعد کیپٹن رینک کے افسر کی نگرانی میں ہنی ٹریپ کا ٹاسک سونپا جانا شروع کیا گیا۔

      ریا آئی ایس آئی کی ایک ٹرینڈ خاتون ایجنٹ ہے

      پردیپ کو پاکستانی خاتون ایجنٹ ریا نے ہنی ٹریپ کا شکار بنایا تھا۔ پردیپ ریا کی محبت میں اتنا دیوانہ ہوگیا کہ وہ گزشتہ سات ماہ سے بغیر پیسے لئے خفیہ اطلاعات اس پاکستانی خاتون ایجنٹ کو دے رہا تھا۔ خفیہ ایجنسیوں نے پوچھ گچھ کے بعد ریا کو لے کر پڑتال کی تو سامنے آیا کہ وہ آئی ایس آئی کی ایک ٹرینڈ خاتون ایجنٹ ہے۔ اس نے اپنے کمرے میں ہندو دیوی دیوتاوں کی تصاویر لگا رکھی تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: