ہندستان میں عدم برداشت کا ماحول نہیں، یہ میڈیا کی پیداوار: ارون جیٹلی کی صفائی

واشنگٹن۔ مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کہا ہے کہ ہندستان میں الگ الگ سیاسی جماعتوں کے لوگوں کے غیر ذمہ دارانہ بیان دینے جیسی 'اکا دکا' وارداتیں ہو سکتی ہیں لیکن اسے ملک میں عدم برداشت کے ماحول کے طور پر نہیں دیکھا جانا چاہئے۔

Apr 16, 2016 01:56 PM IST | Updated on: Apr 16, 2016 01:57 PM IST
ہندستان میں عدم برداشت کا ماحول نہیں، یہ میڈیا کی پیداوار: ارون جیٹلی کی صفائی

واشنگٹن۔ مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کہا ہے کہ ہندستان میں الگ الگ سیاسی جماعتوں کے لوگوں کے غیر ذمہ دارانہ بیان دینے جیسی 'اکا دکا' وارداتیں ہو سکتی ہیں لیکن اسے ملک میں عدم برداشت کے ماحول کے طور پر نہیں دیکھا جانا چاہئے۔ سینئر بی جے پی لیڈر نے اس طرح کے واقعات کو 'بہت خراب' بتایا لیکن کہا کہ ہندستان جیسے بڑے ملک میں یہ 'بہت کم' ہوتے ہیں۔

انہوں نے یہاں ہندستانی صحافیوں کے ساتھ ایک گول میز کانفرنس میں کہا کہ الگ الگ سیاسی جماعتوں کے لوگوں کے غیر ذمہ دارانہ بیان دینے کے اکا دکا واقعات ہو سکتے ہیں لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ زمین پر اس طرح کی کوئی سرگرمی ہے۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ یہ خراب واقعات ہیں۔ یہ بہت ہی خراب واقعات ہیں لیکن ایک بڑے ملک میں ایسا بہت ہی کم ہوتا ہے۔ اس سے پہلے بھی ایسے واقعات ہوتے رہے ہیں۔ جیٹلی نے ملک میں عدم برداشت کے مبینہ ماحول سے متعلق سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ میڈیا کی پیداوار ہے۔

Loading...

انہوں نے کہا کہ زمینی سطح پر موضوع کو لے کر میری اپنی سمجھ یہ ہے کہ کیا ایسی بہت ساری چیزیں ہو رہی ہیں جن سے عدم برداشت نظر آتی ہے؟ جواب نا میں ہے۔ ہندستان جیسے بڑے ملک میں ایک ہی وقت میں کچھ واقعات ہو سکتے ہیں جنہیں بہت ہی نامناسب اور قابل مذمت سمجھا جا سکتا ہے۔ یہ پوچھے جانے پر کہ کیا بی جے پی میں کسی طرح کا تجزیہ ہو رہا ہے، انہوں نے کہا، بنیادی طور پر نہ تو پارٹی کے ایجنڈے میں یا زمینی سطح پر اس طرح کی کوئی سرگرمی ہے جس میں ہندستان جیسے بڑے ملک میں (عدم برداشت) ہو رہا ہے۔

جیٹلی نے کہا کہ کوئی نیوز چینل چار لوگوں کو غیر ذمہ دارانہ بیان دیتے دکھا کر اس کی خبر بنا سکتا ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ یہی ہو رہا ہے۔ سیاست میں وسیع طور پر ایسا دکھایا جاتا ہے، ہمیشہ ایسے تین یا چار لوگ ہوں گے جو واقعات کو لے کر جارحانہ اور متضاد انداز میں جواب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس لئے جب ٹیلی ویژن کیمرے سے آپ کا سامنا ہوتا ہے، گراں تبصرہ، گراں بیان، نامناسب بیان آتے ہیں، آپ وہ کہتے ہیں جو آپ کو نہیں کہنا چاہئے۔ اس طرح چار، پانچ، چھ لوگ ہیں، اس کو آپ انوائرنمنٹ آف ٹولرینس: کہہ دو؟

وزیر خزانہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ اور عالمی بینک کے سالانہ اجلاس میں حصہ لینے کے لئے امریکہ کے ایک ہفتے کے دورے پر ہیں۔ ہفتے کے آخر میں وہ نیویارک جائیں گے جہاں وہ مقامی کاروباری کمیونٹی کے ساتھ بات چیت کریں گے اور اقوام متحدہ میں ایک اجلاس سے خطاب کریں گے۔

Loading...