உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پٹھان کوٹ حملہ کی ہدایت دینے والا جیش محمد کا لیڈر پاکستان سے فرار

    لاہور: پٹھان کوٹ فضائی اڈاہ پر حملے کے دوران دہشت گردوں کو فون پر ہدایات دینے والا جیش محمد کا لیڈر مبینہ طور پر پاکستان سے افغانستان فرار ہوگیا ہے۔

    لاہور: پٹھان کوٹ فضائی اڈاہ پر حملے کے دوران دہشت گردوں کو فون پر ہدایات دینے والا جیش محمد کا لیڈر مبینہ طور پر پاکستان سے افغانستان فرار ہوگیا ہے۔

    لاہور: پٹھان کوٹ فضائی اڈاہ پر حملے کے دوران دہشت گردوں کو فون پر ہدایات دینے والا جیش محمد کا لیڈر مبینہ طور پر پاکستان سے افغانستان فرار ہوگیا ہے۔

    • Agencies
    • Last Updated :
    • Share this:
      لاہور: پٹھان کوٹ فضائی اڈاہ پر حملے کے دوران دہشت گردوں کو فون پر ہدایات دینے والا جیش محمد کا لیڈر مبینہ طور پر پاکستان سے افغانستان فرار ہوگیا ہے۔ حملے کی جانچ کر رہی مشترکہ جانچ ٹیم کے ایک رکن نے کہا کہ دہشت گردوں کی جانب سے دو جنوری کو ائیر بیس پر حملہ کرنے سے پہلے پٹھان کوٹ میں دہشت گردوں کے ساتھ دو درجن سے زائد مرتبہ ٹیلی فون پر بات کرنے والا جیش محمد کا مبینہ آقا افغان سرحد پارکر کرنے میں کامیاب رہا ہے۔
      انہوں نے کہا کہ تقریبا 30 سالہ جیش محمد لیڈر نے پاکستان کے قبائلی علاقے میں رہتے ہوئے دہشت گردوں کے ساتھ تقریبا 18 مرتبہ بات چیت کی تھی۔ انہوں نے جیش محمد لیڈر کی شناخت کا انکشاف کئے بغیر کہا کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اس کو تلاش کرنے کی کوشش کی ، لیکن اطلاعات ہیں کہ وہ افغانستان فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ پوچھ گچھ کے دوران جیش محمد کے لیڈر مسعود اظہر نے دعوی کیا کہ پٹھان کوٹ مہم کے آقا نے کچھ وقت پہلے ہی تنظیم چھوڑ دی تھی۔
      ایک اور ذرائع نے کہا کہ اظہر نے خود کو بے قصور ثابت کرنے کے لئے جیش محمد کے آقا کو نکال دیا۔ انہوں نے کہا کہ تفتیشی ایجنسیاں اس معاملے کی تفصیل سے جانچ کرنے اور پٹھان کوٹ واقعہ کی صحیح حقیقت بتانے کے لئے وزیر اعظم نواز شریف کی جانب سے کافی دباؤ میں ہیں۔ ویسے پنجاب پولیس کے انسداد دہشت گردی محکمہ نے پٹھان کوٹ کے حملہ آوروں اور ان کے سازشیوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی تھی ، لیکن اس سلسلے میں کسی کو بھی ملزم نہیں بنایا گیا ہے۔
      First published: