ہوم » نیوز » عالمی منظر

تارا ریڈ نے سنائی جنسی استحصال کی خوفناک کہانی، جو بائیڈن نے اسکرٹ میں ہاتھ ڈالا اور پھر پار کیں بے شرمی کی ساری حدیں

تاراریڈ نے پہلی مرتبہ اتنی کھل کر اپنی بات رکھی ہے۔ اس واقعے کے بارے میں بتاتے ہوئے انہوں نے کہا، 'جوبائیڈن مجھے دیوار کے سہارے کس کرجکڑے تھے۔ اس دوان میں مسلسل انہیں اپنے سے دور کرنے کی کوشش کررہی تھی۔ میرے گھٹنے درد کررہے تھے کیونکہ وہ اپنے پاؤں کے ذریعے میرے گھٹنوں کو الگ کرنے کی کوشش کررہے تھے۔ اس لئے ہمارے گھٹنے ایک ساتھ جڑے تھے۔ مجھے بھیانک درد ہورہاتھا۔ اس دوران انہوں نے میرے پرائیویٹ پارٹ پر بھی ہاتھ لگایا'۔

  • Share this:
تارا ریڈ نے سنائی جنسی استحصال کی خوفناک کہانی، جو بائیڈن نے اسکرٹ میں ہاتھ ڈالا اور پھر پار کیں بے شرمی کی ساری حدیں
تاراریڈ نے پہلی مرتبہ اتنی کھل کر اپنی بات رکھی ہے۔ اس واقعے کے بارے میں بتاتے ہوئے انہوں نے کہا، 'جوبائیڈن مجھے دیوار کے سہارے کس کرجکڑے تھے۔ اس دوان میں مسلسل انہیں اپنے سے دور کرنے کی کوشش کررہی تھی۔ میرے گھٹنے درد کررہے تھے کیونکہ وہ اپنے پاؤں کے ذریعے میرے گھٹنوں کو الگ کرنے کی کوشش کررہے تھے۔ اس لئے ہمارے گھٹنے ایک ساتھ جڑے تھے۔ مجھے بھیانک درد ہورہاتھا۔ اس دوران انہوں نے میرے پرائیویٹ پارٹ پر بھی ہاتھ لگایا'۔

واشنگٹن: امریکہ(America) میں ڈیموکریٹ پارٹی کی جانب سے ممکنہ صدارتی امیدوار جو بائیڈن(Joe Biden)  پر جنسی زیادتی کا الزام عائد کرنے والی سینیٹ کی سابق اسٹافر اب کھل کر سامنے آگئی ہیں۔ تارا ریڈ  (Tara Reade)نے ایک ٹیلی ویژن انٹرویو میں جنسی استحصال کے معاملے کی ایک تفصیل دی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ چاہتی ہیں کہ جو بائیڈن صدر کی دوڑ سے ہٹ جائیں۔

تارا ریڈ نے پہلی مرتبہ اپنے جنسی استحصال معاملے کے بارے میں آن کیمرا بولا ہے۔ ڈیلی میل کی ایک رپورٹ کے مطابق انہوں نے میگن کیلی کے ساتھ انٹرویو میں جو بائیڈنھ پر لگائے الزامات کی پوری جانکاری دی ہے۔ تاراریڈ نے کچھ سنسنی خیز انکشاف کئے ہیں۔ انٹرویو میں انہوں نے کہا ہے کہ جو بائیڈن نے جنسی استحصال کے دوران ان سے بہت ہی فحش بات بولی۔ تارا ریڈ نے کہا ہے کہ یہ ورا واقعہ اس وقت کا ہے جب وہ 1993  میں یو ایس سینیٹ میں کام کررہی تھیں۔

جوبائیڈن نے پار کی تھیں بے شرمی کی ساری حدیں

فوکس نیوز اور ان بی سی نیوز کی سابق اینکر سے بات کرتے ہوئے تارا ریڈ نے اس واقعے کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ جو بائیڈن نے کیپیٹل ہل ہالوے کی دیوار سے اسے سٹا دیا۔ اس کے بعد جو بائیڈن نے کہا میں نے سنا ہے تم مجھے پسند کرتی ہو۔ اس کے بعد جوبائیڈن فحش باتوں کی اور بے شرمی کی ساری حدوں کو پار کردئے۔

تارا ریڈ نے بتایا کہ جوبائیڈن نے اپنا ہاتھ میری اسکرٹ کے اندر ڈال دیا لیکن جب تارا ریڈ نے مخالفت کی اور یہ ظاہر کیا کہ وہ یہ خواہش نہیں رکھتی ہیں تو جوبائیڈں نے انہیں پیچھے دھکیل دیا۔ اس کے بعد وہ بولتے رہے کہ تم میرے لئے کچھ نہیں ہو۔

تاراریڈ نے بتائی جنسی استحصال کی حقیقت
تاراریڈ نے پہلی مرتبہ اتنی کھل کر اپنی بات رکھی ہے۔ اس واقعے کے بارے میں بتاتے ہوئے انہوں نے کہا، 'جوبائیڈن مجھے دیوار کے سہارے کس کرجکڑے تھے۔ اس دوان میں مسلسل انہیں اپنے سے دور کرنے کی کوشش کررہی تھی۔ میرے گھٹنے درد کررہے تھے کیونکہ وہ اپنے پاؤں کے ذریعے میرے گھٹنوں کو الگ کرنے کی کوشش کررہے تھے۔ اس لئے ہمارے گھٹنے ایک ساتھ جڑے تھے۔ مجھے بھیانک درد ہورہاتھا۔ اس دوران انہوں نے میرے پرائیویٹ پارٹ پر بھی ہاتھ لگایا'۔
اس کے بعد جوبائیڈن اس سے الگ ہوتے ہوئے بولے کہ تم میرے لئے کچھ بھی اہمیت نہیں رکھتی ہو۔ یہ سب سے خراب بات تھی۔ تارا ریڈ نے کہا کہ ان کی باتیں ابھی تک میرے کانوں میں گونج رہی ہیں۔ یہ لفظ پوری زندگی میرے ساتھ  رہے۔ تارا ریڈ نے کہا ہے کہ وہ چاہتی ہیں کہ جوبائیڈن صدر کی دوڑ سے باہر ہو جائیں۔ انہوں نے سختی سے کہا کپ جوبائیڈن کو سامنے آکر قبول کرنا چاہئے۔ وہ امریکی صدر کے عہدے کو داغدار نہیں کرسکتے۔
First published: May 09, 2020 01:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading