ہوم » نیوز » عالمی منظر

امریکی صدر جو بائیڈن کی اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو سے جنگ بندی کی اپیل، فلسطینیوں کو اپنی حفاظت کا حق حاصل

وائٹ ہاؤس نے جاری اسرائیلی فوجی حملوں کے کسی بھی پہلو کی مذمت کرتے ہوئے یہ کہتے ہوئے واضح کیا ہے کہ امریکہ کا قریبی اتحادی غزہ میں حملوں کا جواز ہے۔تاہم عہدیداروں نے مشورہ دیا ہے کہ نجی معاملات میں مزید تنقیدی نظریات کو جاری نہ کیا جائے۔

  • Share this:
امریکی صدر جو بائیڈن کی اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو سے جنگ بندی کی اپیل، فلسطینیوں کو اپنی حفاظت کا حق حاصل
وائٹ ہاؤس نے کہا کہ پیر کے روز اسرائیلی وزیر اعظم کے ساتھ فون پر گفتگو میں صدر نے جنگ بندی کی حمایت کی اور اس مقصد کے لئے مصر اور دیگر شراکت داروں کے ساتھ امریکی مداخلت پر تبادلہ خیال کیا۔

امریکی صدر جو بائیڈن (US President Joe Biden) نے اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو (Israeli Prime Minister Benjamin Netanyahu) سے کہاہے کہ وہ جنگ بندی کی حمایت کرتے ہیں اور غزہ میں اسرائیل کے پُرتشدد فضائی حملوں کو فوری طورپر ختم کرنے کا مطالبے کرتے ہیں۔جو بائیڈن (US President Joe Biden) نے کہا ہے کہ وہ اسرائیل کو جنگ بندی کی اپیل کرتے ہوئے دیگر عالمی رہنماؤں کے ساتھ کھڑے ہیں، جو چاہتے ہیں کہ غزہ پر اسرائیلی حملے اور فوج کی ظالمانہ کارروائیاں ختم ہوں اور خطہ میں قیام امن کو یقینی بنایا جاسکے۔تاہم جوبائیڈن کی اس اپیل کا کوئی اثر نہیں ہوا ہے۔


وائٹ ہاؤس نے کہا کہ پیر کے روز اسرائیلی وزیر اعظم کے ساتھ فون پر گفتگو میں صدر نے جنگ بندی کی حمایت کی اور اس مقصد کے لئے مصر اور دیگر شراکت داروں کے ساتھ امریکی مداخلت پر تبادلہ خیال کیا۔اس فون کے چند گھنٹوں بعد ہی اسرائیل نے منگل کے روز علی الصبح فلسطینی محاصرہ پر نئی گولہ باری کی۔محصور غزہ میں اسرائیلی فوج کی جانب سے فلسطینیوں پر بمباری کی وسیع پیمانے پر مذمت کے برعکس امریکہ نے اسرائیل کے وحشیانہ حملوں کی تائید بھی کی ہے۔


اسرائیلی تشدد کے چھٹے روزفون پربات کرتے ہوئے بائیڈن نے حماس (Hamas) اور دیگر فلسطینی مزاحمتی گروپوں (Palestinian resistance groups) کے راکٹ حملوں کے خلاف اسرائیل کے دفاع میں اپنے ردعمل کااظہارکیاہے۔
اسرائیلی تشدد کے چھٹے روزفون پربات کرتے ہوئے بائیڈن نے حماس (Hamas) اور دیگر فلسطینی مزاحمتی گروپوں (Palestinian resistance groups) کے راکٹ حملوں کے خلاف اسرائیل کے دفاع میں اپنے ردعمل کااظہارکیاہے۔


وائٹ ہاؤس کا بیان اس وقت سامنے آیا جب محصور غزہ میں پیر کے روز ہلاکتوں کی تعداد 212 ہوگئی۔وزارت نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اسرائیلی حملوں کی وجہ سے سنگین اعداد و شمار میں 61 بچے، 35 خواتین اور 16 بوڑھے دفات پاچکے ہیں۔ جبکہ حملوں کے دوران 1,400 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

امریکی اتحادی کو بند کریں

وائٹ ہاؤس نے کہا کہ بائیڈن نے اس بات کا اعادہ کیا کہ اب تک ان کا اصل پیغام کیا ہے وہ یہ کہ ’’اسرائیل کے اندھا دھند راکٹ حملوں کے خلاف اپنا دفاع کرنے کے حق کے لئے ان (فلسطینیوں) کی پختہ حمایت رہی گی‘‘۔بیان میں کہا گیا ہے کہ بائیڈن نے اسرائیل کو تاکید کی ہے کہ وہ بے گناہ شہریوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن کوشش کرے۔

غزہ میں اسرائیلی فضائی حملہ کے بعد ایک عمارت سے آگ کے شعلے اور دھنویں اٹھتے ہوئے ۔ (AP Photo/Hatem Moussa)
غزہ میں اسرائیلی فضائی حملہ کے بعد ایک عمارت سے آگ کے شعلے اور دھنویں اٹھتے ہوئے ۔ (AP Photo/Hatem Moussa)


لیکن وائٹ ہاؤس نے جاری اسرائیلی فوجی حملوں کے کسی بھی پہلو کی مذمت کرتے ہوئے یہ کہتے ہوئے واضح کیا ہے کہ امریکہ کا قریبی اتحادی غزہ میں حملوں کا جواز ہے۔تاہم عہدیداروں نے مشورہ دیا ہے کہ نجی معاملات میں مزید تنقیدی نظریات کو جاری نہ کیا جائے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 18, 2021 11:03 AM IST