உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Quad Summit: وزیر اعظم مودی سمیت 4 لیڈروں کی آئندہ ہفتے میزبانی کریں گے امریکی صدر جوبائیڈن

    Quad Summit: وزیر اعظم مودی سمیت 4 لیڈروں کی آئندہ ہفتے میزبانی کریں گے امریکی صدر جوبائیڈن

    Quad Summit: وزیر اعظم مودی سمیت 4 لیڈروں کی آئندہ ہفتے میزبانی کریں گے امریکی صدر جوبائیڈن

    Quad Summit: امریکی صدر جو بائیڈن نے مارچ میں کواڈ لیڈروں کے پہلے سمٹ کی ڈیجیٹل طریقے سے میزبانی کی تھی، جس میں انڈو پیسیفک خطے کا عزم، آزاد، کھلی، شمولیت، جمہوری اقدار سے وابستہ تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      واشنگٹن: امریکی صدر جوبائیڈن (US President Joe Biden) آئندہ ہفتے کواڈ ممالک (امریکہ، ہندوستان، جاپان، آسٹریلیا) کے لیڈروں کی جسمانی موجودگی کے ساتھ پہلے کواڈ سمٹ (Quad Summit) کی میزبانی کریں گے۔ وزیر اعظم نریندرمودی (Narendra Modi)، امریکی صدر جو بائیڈن (Joe Biden)، آسٹریلیائی وزیر اعظم اسکاٹ ماریسن (Scott Morrison) اور جاپان کے وزیر اعظم یوشیہدے سگا (Yoshihide Suga) کے سمٹ میں کواڈ کے کام کاج کو نئی رفتار دینے کے لئے وسیع تبادلہ خیال کرنے کی امید ہے۔

      پی ٹی آئی-بھاشا کے مطابق، وزیر اعظم مودی کے واشنگٹن جانے کا امکان ہے۔ اس دوران ان کا نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں خطاب کرنے اور 24 ستمبر کو کواڈ سمٹ میں حصہ لینے کے علاوہ امریکی صدر جوبائیڈن کے ساتھ دو طرفہ میٹنگ کرنے کا پروگرام ہے۔

      ہندوستان کی طرف سے حالانکہ نریندر مودی کے سفر کے ساتھ ساتھ کواڈ سمٹ کے بارے میں کوئی باضابطہ اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ وزیر اعظم مودی کے امریکی سفر کی تیاریوں کے تحت ہندوستان اور امریکہ نے کئی میٹنگیں کیں اور ایسی اطلاع ہے کہ یہ موضوع غیر ملکی سکریٹری ہرش وردھن شرنگلا کی حال کے واشنگٹن سفر کے دوران بھی اٹھا تھا۔

      امریکہ - ہند بحرالکاہل خطے میں عملی تعاون کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ گروپ بندی کے لیے واشنگٹن کے عزم کے بارے میں ایک مضبوط اشارہ دینے کے لئے کواڈ کے رہنماؤں کی ذاتی موجودگی کے ساتھ سربراہی اجلاس منعقد کرنے پر غور کر رہا ہے۔ واضح رہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن نے مارچ میں کواڈ لیڈروں کے پہلے سمٹ کی ڈیجیٹل طریقے سے میزبانی کی تھی، جس میں انڈو پیسیفک خطے کا عزم، آزاد، کھلی، شمولیت، جمہوری اقدار سے وابستہ تھا جو زبردستی قبضے جیسی رخنہ اندازی سے آزاد ہو۔ اسے ایک طرح سے چین کے لئے پیغام کے طور پر دیکھا گیا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: