ہوم » نیوز » عالمی منظر

کابل سے بڑی خبر: افغانستان میں کار بم دھماکہ میں 3 افراد کی موت، 4 سکیورٹی اہلکار زخمی

قندھار پولیس کے سربراہ کے قریبی ذرائع کے مطابق صوبہ کے ارغزستان ضلع میں افغان فوج اور دہشت گردوں کے مابین تصادم ہوئے جس کے نتیجہ میں ایک ٹریکٹر میں دھماکہ ہوا۔ طالبان نے سرکاری دستوں پر شہریوں پرحملہ کرنے کا الزام لگایا ہے۔

  • Share this:
کابل سے بڑی خبر: افغانستان میں کار بم دھماکہ میں 3 افراد کی موت، 4 سکیورٹی اہلکار زخمی
قندھار پولیس کے سربراہ کے قریبی ذرائع کے مطابق صوبہ کے ارغزستان ضلع میں افغان فوج اور دہشت گردوں کے مابین تصادم ہوئے جس کے نتیجہ میں ایک ٹریکٹر میں دھماکہ ہوا۔ طالبان نے سرکاری دستوں پر شہریوں پرحملہ کرنے کا الزام لگایا ہے۔

کابل (اسپوتنک): افغانستان کے قندھار صوبہ میں ایک کارمیں ہوئے بم دھماکہ میں تین سیکورٹی اہلکاروں کی موت اور چار دیگر زخمی ہوگئے۔ ذرائع نے سنیچر کو یہ اطلاع دی۔ قندھار پولیس کے سربراہ کے قریبی ذرائع کے مطابق صوبہ کے ارغزستان ضلع میں افغان فوج اور دہشت گردوں کے مابین تصادم ہوئے جس کے نتیجہ میں ایک ٹریکٹر میں دھماکہ ہوا۔ طالبان نے سرکاری دستوں پر شہریوں پرحملہ کرنے کا الزام لگایا ہے۔ طالبان کے ترجمان جبی اللہ مجاہد نے کہاکہ اس حملے میں ایک شہری کی موت اور ایک دیگر زخمی ہوگیا۔ سلامتی دستوں نے دو گاڑیوں کو تباہ کردیا۔


واضح ہو کہ اس سے پہلے افغانستان  (Afghanistan) کی راجدھانی کابل (Kabul) میں گزشتہ کچھ دنوں پہلے  ایک منی بس کو نشانہ بناکر کئے جانے والے بم دھماکے میں 3 افراد ہلاک اور 11 زخمی ہوگئے۔ افغان حکام کے مطابق یہ دھماکہ کابل کے علاقے سر کوتل میں آج صبح ہوا۔ دھماکے  (Kabul Blast) میں سرکاری بس کونشانہ بنایا گیا جس میں وزارت مواصلات اور آئی ٹی کے ملازمین سوار تھے۔ افغان پولیس نے واقعہ سے متعلق مزید تفصیل فراہم نہیں کی جبکہ کسی دہشت گرد گروپ نے ابھی تک دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ خیال رہے قطر کے دارالحکومت دوحہ میں افغان حکومت اور طالبان کے نمائندوں کے مابین جاری امن مذاکرات کے باوجود ملک میں بم دھماکوں کے واقعات کا سلسلہ جاری ہے۔


ٹولو نیوز کی رپورٹ کے مطابق سرکاری ملازمین سے بھری بس پر حملہ کیا گیا۔ اس حملے میں تین لوگ مارے گئے جبکہ گیارہ زخمی ہوئے ہیں۔ ٹولو نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ بس میں  وزارت مواصلات اور آئی ٹی کے ملازمین سوار تھے۔ عینی شاہدین نے اطلاع دی ہے کہ زخمیوں کو اسپتال لے جایا گیا ہے۔


رپورٹ کے مطابق  طالبان Taliban سمیت کسی بھی گروپ نے حملے کی ذمہ داری نہیں لی ہے۔ وہیں پیر کے روز اسی طرح کے واقعے میں  5 عام شہری ہلاک ہوگئے تھے۔ ان میں حاملہ خاتون  سمیت چار خواتین  اور ایک بچہ شامل ہیں۔ اس حملے میں بھی حملہ آوروں نے سرکاری ملازمین سے بھری بس کو نشانہ بنایا۔ حکام سے موصولہ اطلاعات کے مطابق  اس دھماکے میں کم از کم 13 دیگر افراد زخمی ہوئے تھے۔ یہ تمام زخمی عام شہری تھے۔


افغانستان میں اس طرح کے واقعات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ ٹولو نیوز کے اعدادوشمار بتاتے ہیں کہ گزشتہ 18 دنوں میں ہوئے مختلف واقعات میں 144 افرادہلاک ہوگئے ہیں۔ جبکہ 214 دیگر زخمی ہوئے ہیں۔
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 27, 2021 09:38 PM IST