ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستانی فوج پر سندھ کے پولیس سربراہ کو اغوا کرنے کا الزام، کراچی میں ' خانہ جنگی' کی افواہیں

دراصل، سندھ پولیس نے ٹویٹ کر الزام لگایا کہ صفدر کی گرفتاری کا حکم جاری کرنے کے لئے پاکستان رینجرس کے جوانوں نے سندھ پولیس کے سربراہ کو اغوا کر لیا تھا۔ ان الزامات کے بعد پاکستان کے فوجی سربراہ قمر جاوید باجوا نے پورے معاملے کی جانچ کے حکم دے دئیے ہیں۔

  • Share this:
پاکستانی فوج پر سندھ کے پولیس سربراہ کو اغوا کرنے کا الزام، کراچی میں ' خانہ جنگی' کی افواہیں
پاک فوج پر سندھ کے پولیس سربراہ کو اغوا کرنے کا الزام، کراچی میں ' خانہ جنگی' کی افواہیں

اسلام آباد۔ پاکستان کے صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں سابق وزیر اعظم نواز شریف (Nawaz sharif) کے داماد محمد صفدر (Mohd Safdar) کی گرفتاری کو لے کر بنے حالات کے بعد وہاں ' خانہ جنگی' (Civil War) چھڑنے کی افواہیں پھیل گئیں۔ دراصل، سندھ پولیس نے ٹویٹ کر الزام لگایا کہ صفدر کی گرفتاری کا حکم جاری کرنے کے لئے پاکستان رینجرس کے جوانوں نے سندھ پولیس کے سربراہ کو اغوا کر لیا تھا۔ ان الزامات کے بعد پاکستان کے فوجی سربراہ قمر جاوید باجوا (Army Chief General Qamar Javed Bajwa) نے پورے معاملے کی جانچ کے حکم دے دئیے ہیں۔


اس درمیان ٹوئٹر پر دی انٹرنیشنل ہیرالڈ نے بتایا کہ ' سندھ پولیس اور پاکستان فوج کے درمیان اس دوران گولی باری بھی ہوئی جس میں کراچی کے پولیس افسران کی موت ہو گئی۔ اس گولی باری کے بعد وہاں ' خانہ جنگی' چھڑ گئی ہے۔ حالانکہ پاکستان کے بڑے اخبار ڈان نے ایسی کوئی خبر نہیں دی ہے۔



سندھ پولیس نے ٹویٹ کر کہا کہ 18/ 19 اکتوبر کی رات کو فوج کے جوانوں نے آئی جی سندھ کو زبردستی گھر سے اٹھا لیا اور انہیں محمد صفدر کی گرفتاری کے حکم پر دستخط کرنے کے لئے مجبور بھی کیا گیا۔ پولیس نے ٹویٹ کر کہا ہے کہ سندھ پولیس اس رویے سے کافی دکھی ہے جبکہ آئی جی نے مخالفت درج کرانے کے لئے غیر معینہ مدت کے لئے چھٹی پر جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس ٹویٹ کے بعد پاکستان کے فوجی سربراہ قمر جاوید باجوا نے منگل کو سابق وزیر اعظم نواز شریف کے داماد محمد صفدر کی گرفتاری کی جانچ کا حکم دیا ہے۔ صفدر کو پیر کے روز کراچی میں ان کے ہوٹل کے کمرے سے گرفتار کیا گیا تھا۔


فوج نے جاری کیا بیان

فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ فوجی سربراہ نے کراچی کور کمانڈر کو فوری طور پر واقعہ کی جانچ کرنے اور جتنی جلدی ہو سکے رپورٹ سونپنے کو کہا ہے۔ بیان میں حالانکہ یہ واضح نہیں کیا گیا ہے کہ انہوں نے کس واقعہ کی جانچ کرانے کو کہا ہے، لیکن اس سے پہلے پاکستان پیپلس پارٹی کے صدر بلاول بھٹو۔ زرداری نے انتظامیہ سے صفدر کی گرفتاری سے جڑے واقعات کی جانچ کرنے کی مانگ کی تھی۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 21, 2020 10:15 AM IST