உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سعودی سفارت خانہ نے خشوگی معاملہ میں امریکی دعویٰ کو غلط بتایا

    امریکہ میں سعودی سفیر خالد بن سلمان نے امریکی حکومت کے دعویٰ کو غلط قرار دیا

    امریکہ میں سعودی سفیر خالد بن سلمان نے امریکی حکومت کے دعویٰ کو غلط قرار دیا

    امریکہ میں سعودی سفیر خالد بن سلمان نے امریکی حکومت کے دعویٰ کو غلط قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے صحافی جمال خشوگی کو ترکی جانے کے لئے کبھی نہیں کہا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      امریکہ میں سعودی سفیر خالد بن سلمان نے امریکی حکومت کے دعویٰ کو غلط قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے صحافی جمال خشوگی کو ترکی جانے کے لئے کبھی نہیں کہا۔
      اس سے پہلے، ’واشنگٹن پوسٹ‘ کی خبر وں میں بتایا گیا ہے کہ امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے نے فون انٹرسیپٹس کی تحقیقات کی بنیاد پر کہا ہے کہ سعودی کراؤن پرنس محمد بن سلمان نے جمال خشوگی کو قتل کرنے کا حکم دیا تھا۔
      رپورٹوں میں بتایا گیا کہ کراؤن پرنس کی ہدایات ملنے پر سعودی سفیر نے خشوگی کو استنبول میں سعودی سفارت خانہ جانے کے لئے کہا تھا، جہاں ان کاقتل ہوا تھا۔
      کراؤن پرنس کے بھائی سلمان نے ٹوئٹر پر کہا’’میں نے کبھی خشوگی  سے فون کے ذریعہ بات نہیں کی اور کسی بھی وجہ سے ترکی جانے کہ لئے نہیں کہا۔ میں نے امریکی حکومت سے اس دعویٰ سے متعلق تفصیلات جاری کرنے کے لئے کہا ہے‘‘۔

      یہ بھی پڑھیں : سی آئی اے کا دعویٰ ، سعودی عرب کے شہزادے نے دئے تھے جمال خشوگی کے قتل کے احکام

      صحافی جمال خشوگی کی مکہ ، مدینہ ، استنبول اور لندن میں غائبانہ نماز جنازہ
      First published: