உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے کہا- ہم نے اس سال عازمین حج کی تعداد بڑھا کر 10 لاکھ کر دی

    سعودی فرمانروا خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے ٹیلی وژن پر اپنے خطاب میں حجاج کرام کی حفاظت کے حوالے سے مملکت کی دلچسپی اورکاوشوں کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا ہے کہ اس سال حجاج کرام کی تعداد 10 لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔

    سعودی فرمانروا خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے ٹیلی وژن پر اپنے خطاب میں حجاج کرام کی حفاظت کے حوالے سے مملکت کی دلچسپی اورکاوشوں کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا ہے کہ اس سال حجاج کرام کی تعداد 10 لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔

    سعودی فرمانروا خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے ٹیلی وژن پر اپنے خطاب میں حجاج کرام کی حفاظت کے حوالے سے مملکت کی دلچسپی اورکاوشوں کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا ہے کہ اس سال حجاج کرام کی تعداد 10 لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔

    • Share this:

      ریاض: خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے حجاج کرام کی حفاظت کے حوالے سے مملکت کی دلچسپی اور کاوشوں کی یقین دہانی کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سال حجاج کی تعداد 10 لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔ ٹیلی وژن پر اپنے خطاب میں سعودی فرمانروا نے مزید کہا ’’کہ مملکت کی طرف سے (کورونا وائرس) وبائی مرض کا مقابلہ کرنے میں حاصل کی گئی شاندار کامیابی کے نتیجے میں ہم نے اس سال کے سیزن کے لیے اندرون و بیرون ملک سے آنے والے عازمین کی تعداد کو بڑھا کر 10 لاکھ تک پہنچا دی، جبکہ احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئےحجاج کی حفاظت کو یقینی بنایا اور ان کی صحت کا خیال رکھا گیا۔‘‘


      انہوں نے کہا کہ ’صحت کی غیرمعمولی صورتحال نے پوری دنیا کو متاثرکیا، ہم حجاج کی واپسی میں سہولت فراہم کرنے کے لئے خدا کا شکر ادا کرتے ہیں۔ حج کو کامیاب بنانے کے لئے مملکت میں تمام شعبوں میں کارکنان کی جانب سے کی جانے والی زبردست کوششوں پران کا بھی شکریہ ادا کرتے ہیں۔‘‘






      شاہ سلمان نے کہا کہ جو کچھ کیا ہے اور جو کچھ وہ کر رہے ہیں، اس کے لئے ان کا شکریہ ہے۔ یہ ہمارے لئے بہت بڑا اعزاز ہے کہ ہمارے ملک کو حرمین شریفین کی خدمت کا شرف حاصل ہے۔ حج بیت اللہ کے لئے آنے والے دنیا بھر کے مسلمان ہمارے مہمان ہیں۔ ان کی حفاظت اور سلامتی ہماری ذمہ داری ہے۔


      یہ بھی پڑھیں۔ 


      Hajj 2022: منافرت اور بغض سے اجتناب اسلامی تعلیمات کا خاصہ ہے: خطبہ حج میں ڈاکٹر محمد بن العیسیٰ کا خطاب


      کورونا وائرس کے بعد سب سے بڑا حج سیزن


      سعودی حکام نے 10 لاکھ مسلمانوں کو اس شرط پر حج کی اجازت دینے کا اعلان کیا تھا کہ بہ شرطیکہ وہ کورونا کی ویکسین کا کورس مکمل کریں۔ اس بار بیرون ملک سے ساڑھے آٹھ لاکھ مسلمان فریضہ حج کی ادائیگی کے لئے آئے۔ گزشتہ دو سال کے دوران حج محدود ہوکر رہ گیا تھا اور وبا کی وجہ سے اندرون اور بیرون ملک سے حجاج حج کے لئے نہیں آسکے۔





      سعودی عرب کی حکومت نے کورونا وبا کی روک تھام کے لئے مؤثر اقدامات کئے اور ان اقدامات کی کامیابی کے باعث رواں سال دنیا بھر سے لاکھوں مسلمانوں کو حج کی سعادت حاصل کرنے کا موقع ملا۔ سال 2019 میں حج کی ادائیگی میں دنیا بھر سے تقریباً 25 لاکھ مسلمانوں نے شرکت کی تھی اور یہ تاریخ میں عازمین حج کی تعداد کے اعتبار سے ایک ریکارڈ تھا۔







      Published by:Nisar Ahmad
      First published: