ہوشیار! گوگل نے قبول کیا! آپ کے بیڈ روم کی پرائیویٹ باتیں کرتا ہے ریکارڈ

باتیں شروع کرنے کیلئے یوزرس گوگل سے اوکے گوگل کہتے ہیں۔ مگر جب یوزرس کوئی بھی کمانڈ نہیں دیتے تب بھی ان کی پرائیویٹ بات چیت ریکارڈ ہوتی رہتی ہے۔

Jul 18, 2019 07:22 AM IST | Updated on: Jul 18, 2019 10:18 AM IST
ہوشیار! گوگل نے قبول کیا! آپ کے بیڈ روم کی پرائیویٹ باتیں کرتا ہے ریکارڈ

علامتی تصویر

آپ کے گھر میں ہونے والی باتیں اور آپ کے گھر والوں کے علاوہ گوگل بھی سنتا ہے۔ گوگل نے اعتراف کیا ہے کہ وہ اپنے یوزرس کی ریکارڈنگ کو سن رہا ہے۔ گوگل کے مطابق وہ گوگل اسسٹینٹ کے ذریعے یوزرس کی باتیں ریکارڈ کر لیتا ہے۔ گزشتہ دنوں گوگل اسسٹینٹ کی ڈچ زبان میں کچھ ریکارڈنگس بیلجیم کے پبلک براڈ کاسٹر وی آر ٹی پر لیک ہوئی تھی۔ وی آرٹی نے اپنی رپورٹ میں دعوی کیا تھا کہ ان میں سے زیادہ ترکو جان بوجھ کر ریکارڈ کیا گیا تھا۔ گوگل ان باتوں کو بھی سن سکتا ہے جو بیحد پرائیویٹ ہوتی ہیں۔ گوگل ان الزاموں کو مانتا ہے۔

گوگل سرچ کے پروڈکٹ ڈیوس مانسیز نے کمپنی کی بلاگ پوسٹ کے ذریعے مانا ہے کہ دنیا بھر میں موجود لینگویج ایکسپرٹ ان ریکارڈنگ کو سنتے ہیں۔ اس بلاگ کے ذریعے گوگل نے قبول کیا ہے کہ ان باتوں کو لینگویج ایکسپرٹ سن کر اسپیچ ٹیکنالوجی کو بڑھانے میں مدد کرتے ہیں۔

یہ ماہر زبانوں کے بارے میں گوگل کی جانکاری بڑھانے کیلئے اسپیچ ٹیکنالوجی کی ترقی میں مدد کرتے ہیں۔ اسپیچ ٹیکنالوجی پر کام کرنے والے گوگل اسسٹینٹ جیسے پروڈکٹس کو بنانے میں ان کا اہم کردارہوتا ہے۔
Loading...

باتیں شروع کرنے کیلئے یوزرس گوگل سے اوکے گوگل کہتے ہیں۔ مگر جب یوزرس کوئی بھی کمانڈ نہیں دیتے تب بھی ان کی پرائیویٹ بات چیت ریکارڈ ہوتی رہتی ہے۔

 

Loading...