உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Lufthansa: پائلٹس کی ہڑتال کی وجہ سے لفتھانزا کی 800 پروازیں منسوخ، 1.3 لاکھ مسافر متاثر

    یہ بات چیت ناکام رہی

    یہ بات چیت ناکام رہی

    Lufthansa Cancels 800 Flights: لفتھانزا نے ایک بیان میں کہا کہ ایئر لائن 2 ستمبر کو 800 پروازیں منسوخ کر دے گا جس سے 130,000 مسافر متاثر ہوں گے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, IndiaGermany Germany Germany
    • Share this:
      Lufthansa Cancels 800 Flights: جرمن ایئر لائن گروپ لفتھانزا (Lufthansa) نے کہا کہ پائلٹوں کی ہڑتال کی کال کے بعد وہ جمعے کو میونخ (Munich) اور فرینکفرٹ (Frankfurt) میں اپنی تمام پروازیں منسوخ کر رہا ہے۔ پائلٹوں کی یونین ویرینیگنگ کاک پٹ (VC) کے عملے کی جانب سے تنخواہ کے تنازع پر صنعتی کارروائی کا اعلان کرنے کے بعد لفتھانزا نے ایک بیان میں کہا کہ ایئر لائن 2 ستمبر کو 800 پروازیں منسوخ کر دے گا جس سے 130,000 مسافر متاثر ہوں گے۔

      جرمن خبر رساں ایجنسی ڈی پی اے کے مطابق پائلٹوں کی یونین ویرینیگنگ کاک پٹ نے راتوں رات تصدیق کی کہ لفتھانزا کے پائلٹ مسافروں کی آمد و وفت کو روک دیاگیا ہے۔ یونین نے پروازوں کے خلاف اپنے غم و غصہ کے اظہار کے لیے آج یعنی جمعہ کو دن بھر ہڑتال کریں گے۔

      کاک پٹ کا کہنا ہے کہ وہ اس سال اپنے 5,000 سے زیادہ پائلٹس کے لیے تنخواہ میں 5.5 فیصد اضافے کا مطالبہ کر رہا ہے، لیکن بتایا گیا ہے کہ یہ بات چیت ناکام رہی۔ کورونا وائرس کے بحران کے دوران لفتھانزا نے معاہدہ ختم کر دیا اور معاہدے کو نظرانداز کرتے ہوئے کم تنخواہ کے معیار کے ساتھ ایک نئی ایئر لائن قائم کرنا شروع کر دی۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      Swiggy, Zomato جیسے ایپ سے آن لائن کھانا منگانا 60 فیصد تک مہنگا؟ سروے سے بڑا انکشاف

      یہ بھی پڑھیں: 

      مرد اس خاتون کو گڑیا کے طور پر سمجھتے ہیں لیکن حقیقی زندگی میں نہیں رکھنا چاہتا کوئی رشتہ، جانئے پورا ماجرا

      لفتھانزا اے جی کے لیبر ڈائریکٹر اور چیف ہیومن ریسورس آفیسر مائیکل نیگیمن نے کہا کہ ہم وی سی کی ہڑتال کی تائید نہیں کرتے۔ انتظامیہ نے ایک بہت اچھی اور سماجی طور پر متوازن پیشکش کی ہے۔ کووڈ بحران کے مسلسل بوجھ اور عالمی معیشت کے لیے غیر یقینی امکانات کے باوجود یہ اضافہ ہزاروں صارفین کی قیمت پر آتا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: