உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایکسکلوزیو: جیش کے کئی دہشت گرد کورونا انفیکشن کے ہوئے شکار، پاکستان نے علاج کرانے سے کیا انکار

    ڈیمو تصویر

    اطلاعات کے مطابق، لاہور میں رہ رہے دہشت گرد شاہد نے اننت ناگ میں رہ رہے اپنے کنبے کے لوگوں کو فون کر بتایا ہے کہ وہ خود کورونا وائرس کے انفیکشن کا شکار ہو چکا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔ چین (China) سے دنیا بھر میں پھیلے کورونا وائرس (Coronavirus) کے انفیکشن کا اثر اب تیزی سے بڑھنے لگا ہے۔ خفیہ معلومات کے مطابق، جیش محمد (Jaish-e-Mohammed) کے کئی دہشت گرد کورونا وائرس کے انفیکشن کا شکار ہو چکے ہیں۔ ان دہشت گردوں نے پاکستان حکومت سے علاج کے لئے مدد مانگی ہے لیکن پاکستان میں ان کا علاج نہیں کیا جا رہا ہے۔ یہی سبب ہے کہ کشمیر سے پاکستان گئے کئی دہشت گرد ایک بار پھر کشمیر لوٹنے کی فراق میں ہیں۔

      اطلاعات کے مطابق، لاہور میں رہ رہے دہشت گرد شاہد نے اننت ناگ میں رہ رہے اپنے کنبے کے لوگوں کو فون کر بتایا ہے کہ وہ خود کورونا وائرس کے انفیکشن کا شکار ہو چکا ہے۔ باپ کے ساتھ بات کرتے ہوئے شاہد نے یہ بھی کہا کہ اس کی طبیعت اتنی بگڑ چکی ہے کہ شاید یہ اس کا آخری کال ہو گا۔ اس نے بتایا کہ اس کے ساتھ کے کئی لڑکوں کو کورونا ہو چکا ہے اور سبھی کی حالت آئے دن بگڑتی جا رہی ہے۔



      شاہد نے بتایا کہ کورونا کا علاج کرانے کے لئے ان لوگوں نے حکومت کے کئی حکام کو پیغام بھی بھجوایا تھا لیکن پاکستان حکومت نے اس سلسلہ میں کوئی کارروائی نہیں کی۔ جیش کے دہشت گرد نے بتایا کہ اس کے ساتھی کافی ڈرے ہوئے ہیں اور کسی بھی طرح سے وہ کشمیر میں داخل ہونے کی فراق میں ہیں۔
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: