உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    فیس بک ٹھپ ہونے کے بعد مارک زکربرگ کو بڑا نقصان، کچھ گھنٹوں میں گنوائے 600 کروڑ ڈالر

    فیس بک ٹھپ ہونے کے بعد مارک زکربرگ کو بڑا نقصان، کچھ گھنٹوں میں گنوائے 600 کروڑ ڈالر

    فیس بک ٹھپ ہونے کے بعد مارک زکربرگ کو بڑا نقصان، کچھ گھنٹوں میں گنوائے 600 کروڑ ڈالر

    Facebook Outage: کچھ گھنٹوں کے لئے ٹھپ ہوئے فیس بک، انسٹا گرام (Instagram) اور واٹس ایپ (WhatsApp) اور ایک وہسل بلوور (Whistleblower) کے انکشاف نے کمپنی کے سی ای او مارک زکربرگ (Mark Zuckerberg) کو 600 کروڑ ڈال (ہندوستانی کرنسی کے مطابق، تقریباً 4,47,34,83,00,000 روپئے) کا نقصان پہنچایا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کچھ گھنٹوں کے لئے ٹھپ ہوئے فیس بک (Facebook)، انسٹا گرام (Instagram) اور واٹس ایپ (WhatsApp) اور ایک وہسل بلوور (Whistleblower) کے انکشاف نے کمپنی کے سی ای او مارک زکربرگ (Mark Zuckerberg) کو 600 کروڑ ڈال (ہندوستانی کرنسی کے مطابق، تقریباً 4,47,34,83,00,000 روپئے) کا نقصان پہنچایا ہے۔ رپورٹس بتاتی ہیں کہ کچھ ہی گھنٹوں کی اس پریشانی کے دوران امیروں کی فہرست میں بھی مارک زکربرگ ایک مقام پھسل کر مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس سے ایک مقام نیچے آگئے ہیں۔

      پیر کے روز سوشل میڈیا کمپنی کے اسٹاک میں 4.9 فیصد کی گراوٹ درج کی گئی۔ جبکہ ستمبر کے وسط سے ہی تقریباً 15 فیصد کی گراوٹ دیکھی گئی ہے۔ پیر کو اسٹاک میں ہوئی تبدیلی کے بعد مارک زکربرگ کی 12 ہزار 160 کروڑ ڈالر پر آگئی ہے۔ بلومبرگ کی فہرست میں فیس بک کے سی ای او کا نام اب بل گیٹس کے نیچے پہنچ گیا ہے۔ پیر کو ٹھپ ہوئے فیس بک پروڈکٹس کے سبب کروڑوں صارفین متاثر ہوئے تھے۔

      پیر کے روز سوشل میڈیا سائٹس فیس بک، انسٹاگرام اور وہاٹس ایپ کی سروس عالمی سطح پر ڈاون ہوگئی، جس کی وجہ سے صارفین کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا تھا۔
      پیر کے روز سوشل میڈیا سائٹس فیس بک، انسٹاگرام اور وہاٹس ایپ کی سروس عالمی سطح پر ڈاون ہوگئی، جس کی وجہ سے صارفین کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا تھا۔


      واضح رہے کہ پیر کے روز سوشل میڈیا سائٹس فیس بک، انسٹاگرام اور وہاٹس ایپ کی سروس عالمی سطح پر ڈاون ہوگئی، جس کی وجہ سے صارفین کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ ان سوشل میڈیا پلیٹ فارم کی سروس کئی گھنٹوں تک ڈاون رہی۔ صارفین ٹوئٹ کرکے اپنی اپنی پریشانیوں کا اظہار کررہے ہیں۔ وہیں فیس بک نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ ہم جانتے ہیں کچھ لوگوں کو ہمارے ایپس اور مصنوعات تک پہنچنے میں پریشانی ہورہی ہے۔ ہم اسے جلد از جلد معمول پر لانے کیلئے کام کررہے ہیں اور کسی بھی طرح کی تکلیف کے لئے معذرت خواہ ہیں۔

      وہیں وہاٹس ایپ نے اپنے سرکاری ٹوئٹر اکاونٹ پر کہا کہ ہم جانتے ہیں کہ کچھ لوگ اس وقت وہاٹس ایپ پر مسائل کاسامنا کررہے ہیں۔ ہم اسے معمول پر لانے کے لئے کام کررہے ہیں اور جلد از جلد معلومات کو اپ ڈیٹ کریں گے۔ آپ کے صبر کے لئے شکریہ۔ دوسری جانب انسٹا گرام نے کہا کہ انسٹا گرام کے دوستوں ابھی ہم تھوڑے مشکل وقت سے گزر رہے ہیں اور آپ ان کا استعمال کرنے میں پریشانی ہوسکتی ہے۔ ہمارے ساتھ رہیں ہم اس پر ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: