ہوم » نیوز » عالمی منظر

US Violence: ڈونالڈ ٹرمپ کے فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹ پر پابندی، مارک زکربرگ نے دی جانکاری

امریکہ (America) کے سبکدوش ہونے والے صدر ڈونالڈ ٹرمپ (Donald Trump) کے فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹ پر غیرمعینہ مدت کے لئے پابندی عائد کردی گئی ہے۔ اس کی اطلاع فیس بک کے سربراہ مارک زکربرگ نے دی ہے۔

  • Share this:
US Violence: ڈونالڈ ٹرمپ کے فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹ پر پابندی، مارک زکربرگ نے دی جانکاری
ڈونالڈ ٹرمپ کے فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹ پر پابندی، مارک زکربرگ نے دی جانکاری

واشنگٹن: امریکہ (America) کے سبکدوش ہونے والے صدر ڈونالڈ ٹرمپ (Donald Trump) کے فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹ کو غیر معینہ مدت کے لئے بند کردیا گیا ہے۔ فیس بک کے سربراہ مارک زکربرگ نے اس کی اطلاع دی ہے۔ اس سے پہلے فیس بک کی پالیسی کی خلاف ورزی کے سبب ڈونالڈ ٹرمپ کے اکاونٹ کو 24 گھنٹے کے لئے بین کردیا گیا تھا۔ ٹوئٹر نے بھی 12 گھنٹے کے لئے ڈونالڈ ٹرمپ کے ہینڈل کو بین کردیا۔


واضح رہے کہ امریکی میڈیا نے بھی کیپٹل پر سبکدوش ہونے والے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے حامیوں کے حملے کے بعد ٹرمپ کو ایک ’خطرہ’ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ دفتر میں رہنے کے اہل نہیں ہیں، اس لئے انہیں عہدے سے ہٹایا جائے۔ امریکی میڈیا نے ڈونالڈ ٹرمپ کو مواخذے کا عمل یا فوجداری مقدمہ کے تحت ذمہ دار ٹھہرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ ڈونالڈ ٹرمپ کے ہزاروں حامی بدھ کو کیپٹل میں گھس آئے اور اس دوران پولیس کے ساتھ ان کی پُرتشدد جھڑپ ہوئی۔ اس حادثہ میں کم از کم چار لوگوں کی موت ہوگئی اور نئے صدر کے طور پر جو بائیڈن کے نام پر مہر لگانے کے آئینی عمل میں رخنہ اندازی ہوئی۔


امریکہ (America) کے سبکدوش ہونے والے صدر ڈونالڈ ٹرمپ (Donald Trump) کے فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹ کو غیر معینہ مدت کے لئے بند کردیا گیا ہے۔ فیس بک کے سربراہ مارک زکربرگ نے اس کی اطلاع دی ہے۔
امریکہ (America) کے سبکدوش ہونے والے صدر ڈونالڈ ٹرمپ (Donald Trump) کے فیس بک اور انسٹا گرام اکاونٹ کو غیر معینہ مدت کے لئے بند کردیا گیا ہے۔ فیس بک کے سربراہ مارک زکربرگ نے اس کی اطلاع دی ہے۔


وہیں دوسری جانب امریکہ کے سابق صدر براک اوبامہ نے کہا کہ صدرڈونالڈ ٹرمپ نے تین نومبر کے انتخابی نتائج کے بارے میں مسلسل جھوٹ بولا ہے اور بدھ کو واشنگٹن میں دارالحکومت کی عمارت میں تشدد کو ہوا دی ہے۔ براک اوبامہ نے ایک بیان میں کہا۔ ’’تاریخ میں اس تشدد کے واقعہ کو یاد کیا جائے گا، جسے موجودہ صدر کے ذریعہ اکسایا گیا ہے، جو قانونی طریقے سے ہوئے انتخابات کے نتائج کے سلسلے میں بے بنیادجھوٹ بول رہے ہیں۔ یہ ہمارے ملک کے لئے توہین آمیز اور شرم کی بات ہے۔ ریپبلک لیڈر اپنے حامیوں کو انتخابات کے بارے میں سچائی بتانے کو تیارنہیں ہیں۔ ریپبلک لیڈر یاتو سچائی کو نظرانداز کرتے رہیں یا پھرسچائی کو قبول کریں۔ قابل ذکر ہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ کے حامیوں نے راجدھانی عمارت پر حملہ کرکے املاک کو نقصان پہنچایا تھا۔ یہ تشدد کا واقعہ ان کے ذریعہ وہائٹ ہاوس کے پاس ہزاروں حامیوں سے خطاب کئے جانے کے بعد ہوا۔ فی الحال پولیس اور سیکیورٹی فورسز نے مظاہرین کو وہاں سے منتشر کردیا ہے۔

شمالی آئرلینڈ میں ٹرمپ کے خصوسی ایلچی کا استعفی

واشنگٹن: صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے سابق چیف آف اسٹافگ اور شمالی آئرلینڈ میں خصوصی ایلجی مک ملوانے نے جمعات کو کہا کہ انہوں نے ’کیپیٹل بلڈنگ‘ میں ہوئے تشدد کے بعد بدھ کی رات اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔  مک ملوانے نے سی این بی سی کو دیئے گئے انٹرویو میں کہا کہ ’’میں نے کل رات وزیر خارجہ مائک پومپیو سے بات کی اور انہیں بتایا کہ میں استعفی دے رہا ہوں۔ میں یہ نہیں کرسکتا۔ میں رک نہیں سکتا۔‘‘ مک ملوانے نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کے مزید افسران جلد ہی اپنا عہدہ چھوڑ سکتے ہیں جبکہ دیگر لوگوں نے رہنے کا منصوبہ بنایا ہے کیونکہ انہیں ڈر ہے کہ صدر 20 جنوری کو دفتر چھوڑنے سے قبل ’کچھ برا‘ کرسکتے ہیں‘۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 07, 2021 11:14 PM IST