உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مریخ پر کامیابی کے ساتھ لینڈ ہوا NASA کا روور، زندگی کے امکانات پر کرے گا تلاش

    مریخ پر کامیابی کے ساتھ لینڈ ہوا NASA کا روور، زندگی کے امکانات پر کرے گا تلاش

    مریخ پر کامیابی کے ساتھ لینڈ ہوا NASA کا روور، زندگی کے امکانات پر کرے گا تلاش

    امریکی خلائی ایجنسی نے رات تقریباً 2:30 بجے اپنے مارس پرسیورینس کو جیزیرو کریٹر (Jezero Crater) میں کامیابی کے ساتھ لینڈ کرایا۔ 6 پہئے والا یہ روور مریخ پر اترکر وہاں پر کئی طرح کی اطلاعات جمع کرے گا اور ایسی چٹانیں لے کر آئے گا، جن سے ان سوالوں کا جواب مل سکے گا کہ کیا کبھی لال گرہ پر زندگی تھی۔

    • Share this:
      کیپ کینویل: امریکی خلائی ایجنسی 'ناسا (NASA)' نے مریخ پر مارس پرسیورینس روور (Perseverance Rover) بھیجنے میں کامیابی حاصل کرلی ہے۔ امریکی خلائی ایجنسی نے رات تقریباً 2:30 بجے اپنے مارس پرسیورینس کو جیزیرو کریٹر (Jezero Crater) میں کامیابی کے ساتھ لینڈ کرایا۔ 6 پہئے والا یہ روور مریخ پر اترکر وہاں پر کئی طرح کی جانکاریاں جمع کرے گا اور ایسی چٹانیں لے کر آئے  گا، جن سے ان سوالوں کا جواب مل سکے گا کہ کیا کبھی سرخ سیارے پر زندگی تھی۔

      جیزیرو کریٹر مریخ کا انتہائی ناقابل رسائی علاقہ ہے۔ یہاں پر گہری گھاٹی، اور سخت پہاڑ ہیں۔ اس کے ساتھ ہی یہاں پر ریت کے ٹیلے اور بڑے بڑے پتھر اس کو مزید خطرناک بنا دیتے ہیں۔ ایسے میں پرسیورینس مارس روور کی لینڈنگ کی کامیابی پر پوری دنیا کی نظر تھی۔ پرسیورینس روور کے مریخ پر اترنے کے ساتھ ہی امریکہ مریخ پر سب سے زیادہ روور بھیجنے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیا ہے۔ ایسا مانا جاتا ہے کہ جیزیرو کریٹر میں پہلے ندی بہتی تھی، جو کہ ایک جھیل میں جاکر ملتی تھی۔ اس کے بعد وہاں پر پنکھے کی طرح ڈیلٹا بن گیا۔ سائنسداں اس کے ذریعہ یہ پتہ لگانے کی کوشش کریں گے کہ کیا مریخ پر کبھی زندگی تھی۔

      سائنسدانوں کا ماننا ہے کہ اگر کبھی مریخ پر زندگی رہی بھی ہوگی، تو وہ تین سے چار ارب سال پہلے کی بات ہوگی۔ جب مریخ پر پانی بہتا تھا۔ سائنسدانوں کو امید ہے کہ روور سے فلسفہ، الہیات اور خلائی سائنس سے منسلک ایک اہم سوال کا جواب مل سکتا ہے۔ اس منصوبہ کے سائنسداں کین ولیفورڈ نے کہا، ’کیا ہم وسیع کائناتی صحرا میں تنہا ہیں یا کہیں اور بھی زندگی ہے؟ کیا زندگی کبھی بھی، کہیں بھی موافق حالات کی دین ہوتا ہے؟

      ناسا کا یہ 9 واں مریخ مشن ہے
      Perseverance Rover اب تک کا سب سے بڑا روور ہے، جسے ناسا نے بھیجا ہے۔ 1970 کی دہائی کے بعد سے امریکی خلائی ایجنسی کا یہ 9واں مریخ کا مشن ہے۔ ناسا کے سائنس دانوں نے بتایا کہ روور کو مریخ کی سطح پر اترنے میں لگنے والے سات منٹ میں سانسیں تھما دینے والا تھا۔ جیسے ہی یہ روور مریخ پر کامیابی کے ساتھ اترا، سائنسدانوں کی خوشی کا  کوئی ٹھکانہ نہیں رہا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: