ہوم » نیوز » عالمی منظر

مولانا فضل الرحمان نے کیا عمران خان کی’ ناک میں دم‘ ، استعفیٰ کے لئے دیا دو دن کا الٹی میٹم

اپوزیشن جماعتوں نے جمعہ کو پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) حکومت کے خلاف اشتعال انگیزتقریریں کیں۔ لیڈروں اور وہاں جمع مظاہرین نے وزیراعظم خان کو استعفی دینے کے لئے دو دن کا الٹی میٹم دیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 02, 2019 03:02 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مولانا فضل الرحمان نے کیا عمران خان کی’ ناک میں دم‘ ، استعفیٰ کے لئے دیا دو دن کا الٹی میٹم
عمران کو استعفی کے لئے آزادی مارچ کا 48گھنٹے کا الٹی میٹم

اسلام آباد۔ جمعیت علمائے اسلام۔ ایف کے مولانا فضل الرحمان اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کے بینر تلے ہزاروں مظاہرین کے ’آزادی مارچ‘ نے عمران خان کو ’نقلی منتخب‘ وزیراعظم قرار دیتے ہوئے ان سے 48گھنٹوں کے اندر استعفی دینے کے لئے کہا ہے۔ آزادی مارچ کی شروعات صوبہ سندھ سے ہوئی تھی۔ یہ کارواں بدھ کو پنجاب کے شہر لاہور پہنچا اور جمعرات کی رات اسلام آباد میں اپنا سفر ختم کیا۔ اپوزیشن جماعتوں نے جمعہ کو پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) حکومت کے خلاف اشتعال انگیزتقریریں کیں۔ لیڈروں اور وہاں جمع مظاہرین نے وزیراعظم خان کو استعفی دینے کے لئے دو دن کا الٹی میٹم دیا۔


آزادی مارچ کی شروعات صوبہ سندھ سے ہوئی تھی
آزادی مارچ کی شروعات صوبہ سندھ سے ہوئی تھی


پاکستان مسلم لیگ۔نواز (پی ایم ایل۔این) کے لیڈر احسان اقبال نے ’آزادی مارچ‘ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ منتخب نمائندے (عمران خان) کی کوئی عزت نہیں بچی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب تک ایک منتخب حکومت برسراقتدار نہیں آتی، تب تک ملک کی ترقی نہیں ہوسکتی۔

جمعیت علمائے اسلام۔ایف (جے یو آئی۔ایف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے لوگوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی موجودہ حکومت نے کشمیر کے لوگوں کو تنہا چھوڑ دیا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے لوگ آزادی اور خود ارادیت کے لئے لڑیں گے۔

 یہ کارواں بدھ کو پنجاب کے شہر لاہور پہنچا اور جمعرات کی رات اسلام آباد میں اپنا سفر ختم کیا
یہ کارواں بدھ کو پنجاب کے شہر لاہور پہنچا اور جمعرات کی رات اسلام آباد میں اپنا سفر ختم کیا


فضل الرحمان نے بھی عمران خان کو وزیراعظم کے عہدے سے استعفی دینے کے لئے دو دنوں کی مہلت دی۔ انہوں نے کہا کہ ہم انہیں اب لوگوں کے جذبات سے کھیلنے نہیں دیں گے۔ ہم اب مزید صبر نہیں رکھیں گے۔ ہم انہیں دو دنوں کا وقت دے رہے ہیں۔ وہ خود استعفی دے دیں ورنہ عوام کے پاس وزیراعظم کی رہائش گاہ میں گھسنے اور انہیں ( عمران خان) گرفتار کرنے کی طاقت ہے۔
First published: Nov 02, 2019 01:19 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading