ہوم » نیوز » عالمی منظر

میانمارکی فوج انتخابی فیصلوں کو تسلیم کرے گی: فوجی سربراہ

نے پی تاؤ : میانمار کے طاقتور کمانڈر انچیف نے کہا کہ فوج آٹھ نومبر کے پارلیمانی انتخابات کے فیصلوں کو تسلیم کرے گی لیکن انکی اہم تشویش الیکشن میں غیرجانبداری سے متعلق ہے۔

  • Share this:
میانمارکی فوج انتخابی فیصلوں کو تسلیم کرے گی: فوجی سربراہ
نے پی تاؤ : میانمار کے طاقتور کمانڈر انچیف نے کہا کہ فوج آٹھ نومبر کے پارلیمانی انتخابات کے فیصلوں کو تسلیم کرے گی لیکن انکی اہم تشویش الیکشن میں غیرجانبداری سے متعلق ہے۔

نے پی تاؤ : میانمار کے طاقتور کمانڈر انچیف نے کہا کہ فوج آٹھ نومبر کے پارلیمانی انتخابات کے فیصلوں کو تسلیم کرے گی لیکن انکی اہم تشویش الیکشن میں غیرجانبداری سے متعلق ہے۔فوج کے سینئر کمانڈر جنرل من انگ لیئنگ نے کہا کہ انتخابی نتائج کو تمام لوگوں کوتسلیم کرنے کیلئے تیار رہنا چاہئے۔ چاہے اس میں آنگ سانگ سوکی کی نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی کو اکثریت ملے یا کسی دیگر کو۔ تمام لوگوں کو اسے تسلیم کرنےکیلئے تیار رہنا چاہئے۔

انہوں نے میانمار کی عبوری پریس کونسل کے اراکین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر الیکشن غیرجاندارانہ اور منصفانہ ہوتے ہیں اور اس میں نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی کی جیت ہوتی ہے تو بھی انہیں تسلیم کرنے میں کوئی دشواری نہیں ہوگی۔ ہماری تشویش صرف الیکشن کی غیرجانبداری کے سلسلے میں ہے۔ الیکشن کمیشن جس نتیجے کا اعلان کرے گا، ہم اسے نہ صر ف تسلیم کریں گے بلکہ اسے اپنی حمایت بھی دیں گے۔واضح رہے کہ میانمار کے انتخابات میں فوج اب تک مداخلت کرتی رہی ہے اور اس نے 1997 میں نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی کی جیت کے باوجود اسے تسلیم نہیں کیا تھا۔

First published: Aug 25, 2015 07:01 PM IST