உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Israel-Iran: اسرائیل-ایران تنازعہ کے درمیان ایک اور ایرانی کرنل کی موت

    ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای (فائل فوٹو)

    ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای (فائل فوٹو)

    Israel-Iran: تہران میں ایرانی کرنل حسن سید خدائی کے قتل کے ردعمل میں اسرائیل نے اپنے شہریوں کو ترکی کا سفر نہ کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ ایرانیوں نے ایران کی پاسداران انقلاب قدس فورس (IRGC) کے ایک سینئر رکن کرنل حسن سید خدائی کے قتل کے لئے اسرائیل کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

    • Share this:
      تہران:Israel-Iran: ایران نے جمعے کو اپنے پاسداران انقلاب کی ایلیٹ قدس فورس (IRGC) کے ایک اور کرنل کی ہلاکت کی اطلاع دی ہے۔ بیرون ملک ایران کی فوجی کارروائیوں کی نگرانی کرنے والے یونٹ کی طرف سے دو ہفتوں میں یہ دوسرا واقعہ ہے۔

      آئی آر این اے خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کرنل علی اسماعیل زادہ دارالحکومت تہران سے تقریباً 35 کلومیٹر شمال مغرب میں واقع شہر کرج میں چند روز قبل اپنی رہائش گاہ میں ایک واقعے کے دوران انتقال کر گئے تھے۔ دیگر نیوز چینلز نے کہا کہ اسماعیل زادہ اپنی چھت یا بالکونی سے گرے تھے۔ جس کی وجہ سے ان کی موت ہو گئی۔

      جانیے کیا ہے پورا معاملہ؟
      اسرائیل اور ایران کے درمیان جاری تنازع کافی پرانا ہے، بتادیں کہ 1979 میں ایران کے انقلاب نے بنیاد پرستوں کو اقتدار میں آنے کا سنہرہ موقع فراہم کیا تھا اور اس کے بعد سے ایرانی رہنما اسرائیل کو مٹانے کی بات کرتے رہے ہیں۔ ایران اسرائیل کے وجود کو تسلیم نہیں کرتا اور اس کا کہنا ہے کہ اسرائیل نے مسلمانوں کی سرزمین پر ناجائز قبضہ کر رکھا ہے۔ دوسری جانب اسرائیل بھی ایران کو خطرے کے طور پر دیکھتا ہے۔ اس نے ہمیشہ ہی یہ کہا ہے کہ ایران کے پاس ایٹمی ہتھیار نہیں ہونے چاہئیں۔

      تہران میں ایرانی کرنل حسن سید خدائی کے قتل کے ردعمل میں اسرائیل نے اپنے شہریوں کو ترکی کا سفر نہ کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ ایرانیوں نے ایران کی پاسداران انقلاب قدس فورس (IRGC) کے ایک سینئر رکن کرنل حسن سید خدائی کے قتل کے لئے اسرائیل کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      India and Pakistan Relation:کیا شہباز دور میں ہند-پاک کے رشتوں میں آئے گی نرمی؟

      یہ بھی پڑھیں:
      اس ملک میں کوئی بھی مسلم سفر حج پر نہیں جا سکے گا، جانئے کیا ہے وجہ

      خدائی کو تہران میں دو موٹر سائیکل سواروں نے گولی مار کر ہلاک کر دیاتھا۔ اس واقعے کے بعد سے ایران کے اعلیٰ حکام نے اسرائیل کے خلاف جوابی کارروائی کی دھمکی دی ہے۔ تسنیم خبر رساں ایجنسی نے بتایا کہ ایرانی جنرل حسین سلامی نے کرنل حسن سید خدائی کے قتل کا الزام اسرائیلیوں پر لگایا ہے اور اس کا بدلہ لینے کی قسم کھائی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: