உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جشن میں ڈوبا تھا فلسطینی کنبہ، منگیتر کے انتظار میں فون لگاتی رہ گئی دلہن، اچانک ہوا کچھ ایسا کہ بچھ گیا صف ماتم

    عبیر حرب نے جولائی میں اسماعیل ڈیویک (Ismail Dweik) سے منگنی کی تھی۔ دونوں کی شادی ہونے والی تھی۔ 6 اگست کو شادی سے 6 گھنٹے پہلے اسرائیل کی جانب سے ایک راکٹ آیا جس میں اسماعیل جان کی بازی ہار گئے۔

    عبیر حرب نے جولائی میں اسماعیل ڈیویک (Ismail Dweik) سے منگنی کی تھی۔ دونوں کی شادی ہونے والی تھی۔ 6 اگست کو شادی سے 6 گھنٹے پہلے اسرائیل کی جانب سے ایک راکٹ آیا جس میں اسماعیل جان کی بازی ہار گئے۔

    عبیر حرب نے جولائی میں اسماعیل ڈیویک (Ismail Dweik) سے منگنی کی تھی۔ دونوں کی شادی ہونے والی تھی۔ 6 اگست کو شادی سے 6 گھنٹے پہلے اسرائیل کی جانب سے ایک راکٹ آیا جس میں اسماعیل جان کی بازی ہار گئے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, IndiaIsrael, Palestine, Gaza StripIsrael, Palestine, Gaza StripIsrael, Palestine, Gaza Strip
    • Share this:
      غزہ: اسرائیل اور فلسطین تنازعہ کے درمیان کئی شہری بھی راکٹ حملوں کا شکار ہو رہے ہیں۔ ایسی ہی ایک دکھ بھری کہانی یہ بتاتی ہے کہ ان دونوں ملکوں کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے درمیان لوگوں کی خوشیاں نہ جانے کب ماتم میں بدل رہی ہیں۔ عبیر حرب (Abeer Harb) کی عمر 24 سال ہے۔ انہوں نے اپنی درد بھری کہانی بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان کا خاندان غزہ کی پٹی میں ان کی شادی کی خوشیاں منا رہا تھا۔ پھر کچھ ایسا ہوا کہ ان کی خوشی ماتم میں بدل گئی۔

      الجزیرہ کی ایک رپورٹ کے مطابق عبیر کا منگیتر شادی سے قبل ہی اسرائیلی راکٹ حملے کا نشانہ بن گئے۔ عبیر حرب نے جولائی میں اسماعیل ڈیویک (Ismail Dweik) سے منگنی کی تھی۔ دونوں کی شادی ہونے والی تھی۔ 6 اگست کو شادی سے 6 گھنٹے پہلے اسرائیل کی جانب سے ایک راکٹ آیا جس میں اسماعیل جان کی بازی ہار گئے۔ اسماعیل ان 49 افراد میں شامل تھے جو اسرائیل کے راکٹ حملے میں اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ اسرائیل کے مطابق اس نے فلسطینی جہاد گروپ کے ٹھکانے پر حملہ کیا تھا۔

      فلسطینی حکام کے مطابق حملے میں ہلاک ہونے والوں میں نصف سے زیادہ عام شہری تھے۔ جس کا جنگ سے کوئی تعلق نہ تھا۔ اسماعیل نے عبیر سے کہا تھا کہ وہ جلد واپس آجائے گا۔ لیکن وہ کبھی واپس نہ آسکا۔ عبیر کے مطابق راکٹ گرنے کی خبر ملتے ہی اسمٰعیل کو فون کیا۔ لیکن کوئی جواب نہیں آیا۔ اس حملے میں اسماعیل کے ساتھ ان کی والدہ بھی جان کی بازی ہار گئیں۔ عبیر کا کہنا ہے کہ جب اسے یہ خبر ملی تو وہ بالکل ٹوٹ گئیں۔

      Steve Jobs کی بیٹی ہے ہرفن مولا، ماڈلنگ کے ساتھ رکھتی ہیں گھڑ سواری کا شوق


      خاتون کوتھی پولیس کے ساتھ فون پر یہ شرمناک حرکت کرنے کی عادت، 12,000کالز کے بعد ہوا یہ۔۔

      اس کہانی میں غزہ کی جنگ کے انسانی المیوں کو دکھایا گیا ہے۔ اسرائیل اور فلسطین میں سرگرم دہشت گرد گروپوں کے درمیان لڑائی میں کئی خاندانوں کے گھر تباہ ہو گئے۔ کئی خاندانوں کو اپنی شادیاں رد کرنی پڑیں۔ اسرائیل اور فلسطین کے درمیان تنازعہ 1948 سے جاری ہے۔ یروشلم، مغربی کنارے اور غزہ میں مسجد الاقصیٰ میں اکثر جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: