ہوم » نیوز » عالمی منظر

بیت المقدس میں اسرائیلی فوج اور فلسطینیوں کے درمیان پھر جھڑپیں ، 50 سے زائد زخمی ، اقوام متحدہ کا اظہار تشویش

Palestine News : ہلال احمر فلسطین کے مطابق تازہ جھڑپوں میں القدس اور اس کے اطراف میں 53 زخمی ہوئے ہیں جن میں سے 8 کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ ہلال احمر کے مطابق اسرائیلی فوج کی طرف سے فلسطینی شہریوں ‌پر آنسوگیس کی شیلنگ ، دھاتی گولیوں اور صوتی بموں کا استعمال کیا گیا۔

  • UNI
  • Last Updated: May 10, 2021 08:51 PM IST
  • Share this:
بیت المقدس میں اسرائیلی فوج اور فلسطینیوں کے درمیان پھر جھڑپیں ، 50 سے زائد زخمی ، اقوام متحدہ کا اظہار تشویش
بیت المقدس میں اسرائیلی فوج اور فلسطینیوں کے درمیان پھر جھڑپیں ، 50 سے زائد زخمی ، اقوام متحدہ کا اظہار تشویش ۔ فائل فوٹو ۔

یروشیلم : عالمی برادری اور مسلم ملکوں کے تشدد روکنے کی اپیل کے باوجود مسلمانوں کے لئے نہایت مقدس بیت المقدس میں اسرائیلی فوج اور فلسطینیوں کے درمیان ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب دوبارہ جھڑپیں شروع ہوئی ہیں ، جس کے نتیجے میں مزید 50 افراد زخمی ہوئے ہیں ۔ بیت المقدس میں ایک مقامی طبی کارکن نے بتایا کہ القدس میں فلسطینی شہریوں اور اسرائیلی فوج کے درمیان تازہ جھڑپوں کے بعد کے اسرائیلی پولیس کی نفری بڑھا دی گئی ہے۔


ہلال احمر فلسطین کے مطابق تازہ جھڑپوں میں القدس اور اس کے اطراف میں 53 زخمی ہوئے ہیں جن میں سے 8 کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ ہلال احمر کے مطابق اسرائیلی فوج کی طرف سے فلسطینی شہریوں ‌پر آنسوگیس کی شیلنگ ، دھاتی گولیوں اور صوتی بموں کا استعمال کیا گیا۔ ڈان میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق ہلال احمر نے صحافیوں کو ایک مختصر بیان میں کہا کہ حملوں میں سیکڑوں افراد زخمی ہیں اور ان میں سے 50 کو علاج کےلیے اسپتال داخل کرایا گیا ہے۔


واضح رہے کہ اسرائیل کی جانب سے مشرقی بیت المقدس پر قبضے کا سالانہ جشن 'یومِ یروشلم' منانے پر قبل ہی علاقے میں کشیدگی جاری تھی ۔ اسرائیل نے 1967 میں مشرقی بیت المقدس اور اولڈ سٹی پر قبضہ کرلیا تھا جو یہودیوں اور مسیحیوں کے لیے مقدس مقامات ہیں۔ تناؤ کو دور کرنے کی کوشش میں اسرائیلی پولیس نے کہا کہ انہوں نے یہودی گروپوں پر 'یوم یروشلم' کے موقع پر بیت المقدس کے مقدس پلازہ کے دورے پر آنے کی پابندی عائد کردی ہے۔


علاوہ ازیں اسرائیلی پولیس کی جانب سے 'یوم یروشلم' پر منعقد ہونے والے مارچ کا معین راستہ بھی تبدیل کردیا جائے گا ، جس میں ہزاروں یہودی نوجوان پرچم لہراتے ہوئے اولڈ سٹی کے دمشق گیٹ اور مسلم کوارٹر سے گزرتے ہیں ۔ پولیس نے بتایا کہ انہوں نے امن قائم رکھنے کے لیے ہزاروں اسرائیلی افسران کو یروشلم کی گلیوں اور چھتوں پر تعینات کیا ہے۔

ادھر امریکی قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیون نے اتوار کے روز اپنے اسرائیلی ہم منصب سے ملاقات میں بیت المقدس کی صورتحال کے بارے میں 'شدید خدشات' کا اظہار کیا تھا۔ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس نے بھی اتوار کے روز اس صورتحال پر اپنی تشویش کا اظہار کیا تھا۔

علاوہ ازیں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات (یو اے ای) نے بیت المقدس میں اسرائیلی فورسز کے حملوں کے بعد فلسطینیوں کو ان کے گھروں سے بے دخل کرنے کے تل ابیب کے منصوبوں کی مذمت کی ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 10, 2021 08:45 PM IST