உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مسجد نبوی میں پاکستانی وفد کو دیکھ کر شہباز شریف 'چور۔چور' کے لگے نعرے، سعودی عرب خفا، 100 افراد کو کیا گرفتار

     اس معاملے پر سعودی عرب کی حکومت کا ردعمل سامنے آیا ہے۔

    اس معاملے پر سعودی عرب کی حکومت کا ردعمل سامنے آیا ہے۔

    سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر شہباز شریف کو دیکھ کر چور چور کے شور مچانے کی ویڈیو کافی وائرل ہو رہی ہے جس میں کئی زائرین کو ’’چور چور‘‘ کے نعرے لگاتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق جب پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف اور ان کا وفد مسجد نبوی میں داخل ہوا تو اس وقت کچھ لوگوں نے شہباز شریف کو مسجد کے صحن میں دیکھتے ہی چور، چور کے نعرے لگانے شروع کر دیے۔

    • Share this:
      ریاض۔ عمران خان اور ان کے حامیوں نے پاکستان کے نئے وزیر اعظم شہباز شریف Shahbaz Sharif اور ان کی نئی حکومت کے لیے معاملات کو بہت مشکل بنا دیا ہے۔ تین روز کے لیے سعودی عرب دورے پر پہنچنے والے شہباز شریف کو مدینہ منورہ میں فضیحت کا سامنا کرنا پڑا۔ شہباز شریف کے وفد کو مسجد نبوی کے اندر دیکھ کر لوگوں نے چور چور کے نعرے لگانے شروع کر دیے۔ اس کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے۔ تاہم اس معاملے پر سعودی عرب کی حکومت کا ردعمل سامنے آیا ہے۔

      سعودی عرب کی حکومت کے مطابق یہ عمران خان کی پارٹی تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے حامی تھے جو ہجوم میں حکومتی وفد کے خلاف 'چور، چور' کے نعرے لگا رہے تھے۔ سعودی عرب کے حکام نے نعرے لگانے والے ایسے 100 افراد کو حراست میں لے لیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: Pakistani Actressصاحبہ افضل نے بیٹیوں کو بتایا بوجھ، بیٹوں کی طرفداری کرنے پر بری طرح ٹرول


      سعودی عرب نے کہا کہ ہم ایسے منصوبہ بند احتجاج سے مطمئن نہیں ہیں۔ ایسے واقعات پر سخت کارروائی کی جائے گی۔

      OMG! آنکھوں کا دھوکہ نہیں، شخص کے راز کھولتی ہے تصویر، پہلی نظر میں کیا آپ نے دیکھا سیکریٹ

      سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر شہباز شریف کو دیکھ کر چور چور کے شور مچانے کی ویڈیو کافی وائرل ہو رہی ہے جس میں کئی زائرین کو ’’چور چور‘‘ کے نعرے لگاتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق جب پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف اور ان کا وفد مسجد نبوی میں داخل ہوا تو اس وقت کچھ لوگوں نے  شہباز شریف کو مسجد کے صحن میں دیکھتے ہی چور، چور کے نعرے لگانے شروع کر دیے۔ شہباز شریف کے ساتھ کچھ سکیورٹی اہلکار بھی نظر آ رہے ہیں اور اس وقت شہباز شریف کچھ اہلکاروں کے ساتھ ای رکشے پر بیٹھے نظر آ رہے ہیں۔

      ویڈیو میں پاکستان کی نئی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب اور رکن قومی اسمبلی شاہ زین بگی بھی وزیراعظم شہباز شریف کے ساتھ دیکھا جا سکتا ہے۔ پاکستانی اخبار کے مطابق مریم اورنگزیب نے اس واقعے کا بالواسطہ طور پر وزیراعظم عمران خان کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔ انہوں نے ایکسپریس ٹریبیون کو بتایا، "میں اس مقدس سرزمین پر اس شخص کا نام نہیں لوں گی، کیونکہ میں اس سرزمین کو سیاست کے لیے استعمال نہیں کرنا چاہتی لیکن، انہوں نے (پاکستانی) معاشرے کو تباہ کر دیا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: