உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    India-Pakistan: پاکستان میں غلطی سے داخل ہوا میزائل، ہندوستان نے دیا ہائی لیول کورٹ آف انکوائری کا حکم

    ’سپرسونک آبجیکٹ ہریانہ کے سرسا سے لانچ کیا گیا تھا‘

    ’سپرسونک آبجیکٹ ہریانہ کے سرسا سے لانچ کیا گیا تھا‘

    پاکستان کی مسلح افواج کے میڈیا ونگ انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (ISPR) نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ سپرسونک آبجیکٹ ہریانہ کے سرسا سے لانچ کیا گیا تھا اور راجستھان میں مہاجن فیلڈ فائرنگ رینج کی طرف بڑھ رہا تھا لیکن داخل ہونے سے پہلے اس نے اپنا رخ تبدیل کر لیا۔

    • Share this:
      ہندوستان نے جمعہ کے روز کہا کہ 9 مارچ 2022 کو معمول کی دیکھ بھال کے دوران تکنیکی خرابی کی وجہ سے ایک میزائل غلطی سے داغا گیا اور اس نے اس واقعہ کی اعلیٰ سطحی عدالت کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔ یہ بیان پاکستان کی فوج کے اعلان کے ایک دن بعد سامنے آیا ہے کہ بغیر وار ہیڈ کے میزائل نے ملک کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی تھی۔

      مرکز کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حکومت ہند نے سنجیدگی سے غور کیا ہے اور ایک اعلیٰ سطحی کورٹ آف انکوائری کا حکم دیا ہے۔ اس دوران یہ بھی دتایا گیا ہے کہ معلوم ہوا ہے کہ میزائل پاکستان کے ایک علاقے میں گرا۔ جہاں یہ واقعہ انتہائی افسوسناک ہے وہیں یہ بھی راحت کی بات ہے کہ اس حادثے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

      EXPLAINED: دوسری جنگ عظیم کےبعدپناہ گزینی کابدترین بحران! یوکرینی باشندے ملک چھوڑنےپرمجبور



      پاکستان کی مسلح افواج کے میڈیا ونگ انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (ISPR) نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ سپرسونک آبجیکٹ ہریانہ کے سرسا سے لانچ کیا گیا تھا اور راجستھان میں مہاجن فیلڈ فائرنگ رینج کی طرف بڑھ رہا تھا لیکن داخل ہونے سے پہلے اس نے اپنا رخ تبدیل کر لیا۔ یہ ان کے علاقے میں 124 کلومیٹر سے دور تھا۔

      Omicron سے متاثر شخص 24 گھنٹے کے اندر پھیلانے لگتا ہے کورونا، جانئے اس کی بڑی وجہ




      جمعہ کی صبح پاکستان نے ہندوستان کے چارج ڈی افیئرز کو بھی طلب کیا اور اس پر اپنا احتجاج ظاہر کیا کہ ہندوستان نے اپنی فضائی حدود کی بلا اشتعال خلاف ورزی کی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: