உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Monkeypox: مونکی پوکس کی وبا 1,000 کیسز میں سرفہرست، ڈبلیو ایچ اونےکہا 'حقیقی خطرہ‘

    یو اے ای میں مونکی پوکس کا پہلا کیس سامنے آیا ہے۔

    یو اے ای میں مونکی پوکس کا پہلا کیس سامنے آیا ہے۔

    ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سربراہ ٹیڈروس اذانوم گیبریئس نے کہا کہ اقوام متحدہ کی صحت کی ایجنسی اس وائرس کے خلاف بڑے پیمانے پر ویکسینیشن کی سفارش نہیں کر رہی ہے اور مزید کہا کہ اس وبا سے اب تک کسی ہلاکت کی اطلاع نہیں ملی ہے۔

    • Share this:
      عالمی ادارہ صحت (WHO) نے بدھ کو خبردار کیا کہ دنیا بھر میں ایک ہزار سے زیادہ کیسز کی تصدیق ہو چکی ہے۔ اسی دوران مونکی پاکس (Monkeypox) کا خطرہ بڑھتا جارہا ہے۔ جو کہ آنے والے دنوں میں حقیقی خطرہ ثابت ہوگا۔

      ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سربراہ ٹیڈروس اذانوم گیبریئس نے کہا کہ اقوام متحدہ کی صحت کی ایجنسی اس وائرس کے خلاف بڑے پیمانے پر ویکسینیشن کی سفارش نہیں کر رہی ہے اور مزید کہا کہ اس وبا سے اب تک کسی ہلاکت کی اطلاع نہیں ملی ہے۔

      ٹیڈروس نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ غیر مقامی ممالک میں مونکسی پاکس کا خطرہ حقیقی ہے۔ زونوٹک بیماری نو افریقی ممالک میں انسانوں میں مقامی طور پر پھیل رہی ہے لیکن پچھلے مہینے کئی دیگر ریاستوں میں پھیلنے کی اطلاع ملی ہے۔ یہ زیادہ تر یورپ میں اور خاص طور پر برطانیہ، اسپین اور پرتگال میں پھیل رہی ہے۔

      مزید پڑھیں: امرناتھ یاترا 2022: سیکورٹی امور کا جائزہ لینے کی غرض سے پولیس کے اعلیٰ افسران خود کر رہے ہیں نگرانی


      ٹیڈروس نے کہا کہ اگرچہ یہ واضح طور پر متعلقہ کیس ہیں، یہ وائرس افریقہ میں کئی دہائیوں سے گردش کر رہا تھا اور لوگ اس سے ہلاک ہو رہا تھا، لیکن اس سال اب تک 1,400 سے زیادہ مشتبہ کیسز اور 66 اموات ہو چکی ہیں۔


      مزید پڑھیں: UPI-Credit Card لنکنگ کا آر بی آئی نے آج کیا اعلان، کتنے ہونگے چارجز؟ جانیے تفصیلات

      ٹیڈروس نے کہا کہ اب 29 ممالک سے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کو مونکی پوکس کے 1,000 سے زیادہ تصدیق شدہ کیسز کی اطلاع دی گئی ہے جو اس بیماری کے لیے مقامی نہیں ہیں۔ ابھی تک ان ممالک میں کسی موت کی اطلاع نہیں ملی ہے۔ کیسز بنیادی طور پر رپورٹ کیے گئے ہیں۔ یہ ہم جنس مردوں کے درمیان زیادہ پھیل رہا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: