உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سعودی عرب اورخلیج ممالک میں رمضان المبارک کا آغاز، ہندوستان میں 7 مئی کوپہلا روزہ

    فائل فوٹو

    فائل فوٹو

    عرب اورخلیجی ممالک میں شعبان المعظم کی 30 تاریخ تھی، لہٰذا وہاں 6 مئی سے روزہ کا اہتمام کیا جائےگا۔

    • Share this:
      سعودی عرب، قطر، ﻣﺘﺤﺪﮦ ﻋﺮﺏ ﺍﻣﺎﺭﺍﺕ ﺍﻭﺭﺑﯿﺸﺘﺮﺧﻠﯿﺠﯽ ﻣﻤﺎﻟﮏ ﻣﯿﮟ ﺁﺝ اتوارﮐﯽ شب ﺭﻣﻀﺎﻥ ﺍﻟﻤﺒﺎﺭﮎ ﮐﺎ ﭼﺎﻧﺪ ﻧﻈﺮﺁگیا۔ ﺟﺲ ﮐﮯ ﺳﺒﺐ ﻭﮨﺎﮞ ﭘﮩﻼ ﺭﻭﺯﮦ 6 ﻣﺌﯽ 2019 ﺑﺮﻭﺯﭘﯿﺮﮐﻮﮨﻮﮔﺎ۔ آج عرب اورخلیجی ممالک میں شعبان المعظم کی 30 تاریخ تھی، لہٰذا وہاں 6 مئی سے روزہ کا اہتمام کیا جائے گا۔

      گزشتہ روزﺳﺮﮐﺎﺭﯼ ﻃﻮﺭﭘﺮﺳﻌﻮﺩﯼ ﻋﻠﻤﺎﺀ ﮐﻮﻧﺴﻞ ‏(ﺳﭙﺮﯾﻢ ﮐﻮﺭﭦ ‏) ﻧﮯﺍﻋﻼﻣﯿﮧ ﺟﺎﺭﯼ ﮐﺮﮐﮯ ﮐہا تھا کہ ﺳﻌﻮﺩﯼ ﻋﺮﺏ ﻣﯿﮟ ﺍﻡ ﺍﻟﻘﺮﯼٰ ﮐﯿﻠﻨﮉﺭﮐﮯ ﻟﺤﺎﻅ ﺳﮯ ﺷﻌﺒﺎﻥ ﮐﯽ 29 ﺗﺎﺭﯾﺦ ﺗﮭﯽ، ﺍﻣﯿﺪ ﮐﯽ ﺟﺎﺭﮨﯽ ﺗﮭﯽ ﮐﮧ ﺍٓﺝ ﭼﺎﻧﺪ ﻧﻈﺮﺁﺟائے گا اورﮐﻞ ﺳﮯ ﭘﮩﻼ ﺭﻭﺯﮦ ﮨﻮﮔﺎ، ﻟﯿﮑﻦ ﺍٓﺝ ﭼﺎﻧﺪ ﻧﻈﺮﻧﮧ ﺍٓﻧﮯﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﻋﺮﺏ ﻭﺧﻠﯿﺠﯽ ﻣﻤﺎﻟﮏ ﻣﯿﮟ ﭘﮩﻼ ﺭﻭﺯﮦ 6 ﻣﺌﯽ ﺑﺮﻭﺯﭘﯿﺮسے ﺭﮐﮭﺎ ﺟﺎﺋﮯ ﮔﺎ۔ سعودی ﻣﯿﮉﯾﺎ ﮐﯽ ﺭﭘﻮﭨﺲ ﺍﻭﺭﺁن لاﺋﻦ ﻧﯿﻮﺯﭘﻮﺭﭨﻞ ﮐﮯﻣﻄﺎﺑﻖ ﺭﻭٔﯾﺖ ﮨﻼﻝ ﮐﮯ ﻣﺎﮨﺮﯾﻦ ﻓﻠﮑﯿﺎﺕ ﮐﺎ ﺳﺐ ﺳﮯ ﺑﮍﺍ ﺍﺟﻼﺱ متعدد شہروں مثلا ﺳﺪﻳﺮ، تمیر، الفضیل، ﺍﻟﻘﺼﻴﻢ، وغیره ﻣﯿﮟ ﻣﻨﻌﻘﺪ ﮐﯿﺎ ﮔﯿﺎ، ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﺍﻧﺘﮩﺎﺋﯽ ﺣﺴﺎﺱ ﭨﯿﻠﯽ ﺍﺳﮑﻮﭖ ﻭﺩﯾﮕﺮ ﺍٓﻻﺕ ﮐﯽ ﻣﺪﺩ ﺳﮯ سرکاری علماء و مفتیان کرام اورماہر فلکیات کے ذریعہ ﭼﺎﻧﺪ ﺩﯾﮑﮭﻨﮯ ﮐﯽ ﮐﻮﺷﺶ ﮐﯽ ﮔﺌﯽ، لیکن کہیں سے چاند دیکھنے کی تصدیق نہیں ہوئی۔  ﺷﮩﺎﺩﺗﻮﮞ ﮐﮯ ﻓﯿﺼﻠﮯ ﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﺍﺟﻼﺱ ﻧﮯ ﭼﺎﻧﺪ ﻧﻈﺮ ﻧﮧ ﺍٓﻧﮯ ﮐﺎ ﺍﻋﻼﻥ ﮐﺮﺩﯾﺎ گیا تھا۔

      دوسری جانب ہندوستان کی رویت ہلال کمیٹیوں کےذریعہ جاری پریس ریلیزکےمطابق آج رمضان المبارک کا چاند نظرنہیں آیا ہے۔ مختلف ریاستوں سے رویت کی تصدیق نہ ہونے کے بعد تمام کمیٹیوں نےاس بات کا اعلان کیا کہ کل 6 مئی بروز پیرشعبان المعظم کی 30 تاریخ ہوگی اورپہلا روزہ 7 مئی 2019 بروزمنگل کو رکھا جائے گا۔

      امارت شرعیہ ہند، نئی دہلی، امارت شرعیہ بہار، اڈیشہ، جھارکھنڈ پھلواری شریف پٹنہ، مرکزی جمعیت اہلحدیث رویت ہلال کمیٹی، نئی دہلی، مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے صدر اور شاہی امام مولانا سید احمد بخاری، مرکزی چاند کمیٹی کےصدر اور امام عید گاہ، لکھنو مولانا خالد رشید فرنگی محلی وغیرہ نے پریس ریلیز جاری کرکے اس بات کا اعلان کیا کہ  مختلف شہروں اورعلاقوں میں چاند دیکھنے کا اہتمام کیا گیا، لیکن چاند نظرنہیں آیا، اس لئے 6 مئی 2019  کوشعبان کی 30 تاریخ ہوگی اور 7 مئی سے رمضان کا آغاز ہوگا۔
      First published: