உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمران خان کے وزیر کا انکشاف- نواز شریف نے دیا تھا ہندوستان کو اجمل قصاب کا سراغ، ایسے کی تھی مدد

    پاکستان کے وزیر شیخ رشید (Sheikh Rashid) نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف (Ex PM Nawaz Sharif) نے سال 2008 کے ممبئی حملے کے وقت ہندوستان کی مدد کی تھی۔ اس وقت نواز شریف نے ممبئی حملے میں شامل اجمل عامر قصاب (Ajmal Amir Kasab) کی لوکیشن کا سراغ ہندوستان کو دیا۔ اسی کے بعد اسے ہندوستانی ایجنسیوں نے گرفتار کرلیا تھا۔ بعد میں اسے پھانسی دے دی گئی۔

    پاکستان کے وزیر شیخ رشید (Sheikh Rashid) نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف (Ex PM Nawaz Sharif) نے سال 2008 کے ممبئی حملے کے وقت ہندوستان کی مدد کی تھی۔ اس وقت نواز شریف نے ممبئی حملے میں شامل اجمل عامر قصاب (Ajmal Amir Kasab) کی لوکیشن کا سراغ ہندوستان کو دیا۔ اسی کے بعد اسے ہندوستانی ایجنسیوں نے گرفتار کرلیا تھا۔ بعد میں اسے پھانسی دے دی گئی۔

    پاکستان کے وزیر شیخ رشید (Sheikh Rashid) نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف (Ex PM Nawaz Sharif) نے سال 2008 کے ممبئی حملے کے وقت ہندوستان کی مدد کی تھی۔ اس وقت نواز شریف نے ممبئی حملے میں شامل اجمل عامر قصاب (Ajmal Amir Kasab) کی لوکیشن کا سراغ ہندوستان کو دیا۔ اسی کے بعد اسے ہندوستانی ایجنسیوں نے گرفتار کرلیا تھا۔ بعد میں اسے پھانسی دے دی گئی۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے وزیر شیخ رشید (Sheikh Rashid) نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف (Ex PM Nawaz Sharif) نے سال 2008 کے ممبئی حملے کے وقت ہندوستان کی مدد کی تھی۔ اس وقت نواز شریف نے ممبئی حملے میں شامل اجمل عامر قصاب (Ajmal Amir Kasab) کی لوکیشن کا سراغ ہندوستان کو دیا۔ اسی کے بعد اسے ہندوستانی ایجنسیوں نے گرفتار کرلیا تھا۔ بعد میں اسے پھانسی دے دی گئی۔

      شیخ رشید اتنے پر ہی نہیں رکے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف (Nawaz Sharif) ان لیڈروں میں شمار ہوتے ہیں، جنہوں نے پیسوں کے لئے اپنے ضمیر کو بیچ دیا۔ پاکستان کی شبیہ کو نقصان پہنچایا۔ انہوں نے صدام حسین، معمر قذافی اور اسامہ بن لادن تک سے مالی مدد لی۔ واضح رہے کہ شیخ رشید پاکستان کے داخلی امور کے وزیر ہیں۔ انہیں وزیر اعظم عمران خان (Pakistan’s PM Imran Khan) کا قریبی مانا جاتا ہے۔ وہ اکثر اپنے بیانات سے سرخیوں میں رہتے ہیں۔ اکثر ان کے بیان عجیب وغریب ہی ہوتے ہیں۔ البتہ اس بار نواز شریف (Nawaz Sharif) کے بارے مین دیئے ان کے بیان کے پیچھے گہرے مطب پوشیدہ ہیں، ایسا کہا جا رہا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      عمران خان کا آخری داوں، خفیہ لیٹر بم کو کریں گے شیئر، اس کے بعد دے سکتے ہیں استعفیٰ!

      نواز شریب کے بھائی شہباز شریف اس وقت عمران کی کرسی کے دعویدار

      دراصل، اس وقت پاکستان مین پورا اپوزیشن عمران خان (PM Imran Khan) کے خلاف متحد ہے۔ یہاں تک کہ دو مخالف جماعتیں پاکستان پیپلز پارٹی (PPP) اور پاکستان مسلم لیگ -نواز (PML-N) تک ایک دوسرے سے ہاتھ ملا چکی ہیں۔ اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد کی قیادت نواز شریف کے بھائی شہباز شریف (Shahbaz Sharif) کر رہے ہیں۔

      اپوزیشن جماعتوں نے مل کر پاکستان کی قومی اسمبلی میں عمران حکومت (Imran Govt) کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی تجویز پیش کیا ہوا ہے۔ اس پر 31 مارچ کو بحث ہونی ہے۔ ایسا کہا جا رہا ہے کہ اگر یہ تحریک عدم اعتماد کی تجویز (No-Confidence Motion) منظور ہوجاتی ہے یا اس ووٹنگ سے پہلے ہی عمران خان استعفیٰ دے سکتے ہیں۔ ان کی جگہ شہباز شریف کو وزیر اعظم عہدہ مل سکتا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: