உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمران خان کو ہندوستان میں کہا جاتا ہے کٹھ پتلی،جانیے نواز شریف نے ایسی بات کیوں کہی؟

    نواز شریف کی پاکستانی وزیراعظم عمران خان پر سخت تنقید۔

    نواز شریف کی پاکستانی وزیراعظم عمران خان پر سخت تنقید۔

    شریف نے کہا کہ ’یہ شخص (عمران خان) کہا کرتا تھا کہ وہ آئی ایم ایف (بین الاقوامی مونیٹری فنڈ) میں جانے کے بدلے خودکشی کرلے گا۔ اب ہم انتظار کررہے ہیں کہ وہ کب خودکشی کریں گے۔‘ عمران نے سابق پاکستانی حکومت کی جانب سے بین الاقوامی ادارے سے قرض لینے پر سخت تنقید کی تھی اور شریف موجودہ وزیراعظم عمران خان کے اُسی بیان کا ذکر کررہے تھے۔

    • Share this:
      لاہور: پاکستان (Pakistan) کے سابق وزیراعظم نواز شریف (Nawaz Sharif) نے وزیراعظم عمران خان (PM Imran Khan) پر ایک مرتبہ پھر طنز کرتے ہوئے کہا کہ کرکٹر سے سیاست میں آئے عمران خان کو ہندوستان میں ’کٹھ پتلی‘ لیڈر کہا جاتا ہے، کیونکہ انہیں 2018 میں طاقتور فوج کی جانب سے اقتدار میں لایا گیا تھا۔ شریف ابھی لندن میں دل کی بیماری کا علاج کروارہے ہیں۔ انہوں نے لاہور میں معنقد پاکستان مسلم لیگ-نواز (PML-N) کی ایک میٹنگ کو ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کیا۔

      نواز شریف نے کہا، ’ہندوستان میں وزیراعظم عمران خان کو کٹھ پتلی کہا جاتاہے اور امریکہ میں یہ کہا جاتا ہے کہ اُن کے (عمران) پاس میئر سے بھی کم حقوق ہیں۔ ایسا اس لئے ہے کیونکہ دنیا جاناتی ہے کہ اُنہیں کیسے اقتدار میں لایا گیا ہے۔ عمران عام لوگوں کے ووٹوں سے نہیں بلکہ فوجی قوت کی مدد سے اقتدار میں آئے ہیں۔‘ لاہور میں معنقد پی ایم ایل این کی میٹنگ میں نواز شریف نے اپنے حامیوں کو کئی احکامات اور ہدایتیں بھی دیں۔

      پاکستان میں بدعنوانی کے دو کیسیز میں قصوروار ٹھہرائے گئے 71 سالہ نواز شریف نومبر 2019 سے لندن میں رہ رہے ہیں۔ اُس وقت لاہور ہائی کورٹ نے اُنہیں علاج کے لئے چار ہفتوں کی خاطر بیرون ملک جانے کی اجازت دی تھی۔ پارٹی کی میٹنگ میں شریف نے 2018 کے عام انتخابات میں بدعنوانی کے ذریعے پاکستان تحریک انصاف (PTI) کی کٹھ پتلی حکومت تھوپنے کے لئے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجواہ اور خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کے سابق سربراہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید پر بھی تنقید کی۔

      شریف نے کہا کہ ’یہ شخص (عمران خان) کہا کرتا تھا کہ وہ آئی ایم ایف (بین الاقوامی مونیٹری فنڈ) میں جانے کے بدلے خودکشی کرلے گا۔ اب ہم انتظار کررہے ہیں کہ وہ کب خودکشی کریں گے۔‘ عمران نے سابق پاکستانی حکومت کی جانب سے بین الاقوامی ادارے سے قرض لینے پر سخت تنقید کی تھی اور شریف موجودہ وزیراعظم عمران خان کے اُسی بیان کا ذکر کررہے تھے۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: