உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    میٹا پلیٹ فارمز پر ٹکنالوجی سے متعلق آدھے سے زائد ملازمین کی تخفیف، باقی ملازمین بھی پریشان

    مجموعی طور پر برطرف کیے جانے والوں میں سے 54 فیصد کاروباری عہدوں پر فائز تھے

    مجموعی طور پر برطرف کیے جانے والوں میں سے 54 فیصد کاروباری عہدوں پر فائز تھے

    میٹا ہیومن ریسورس کی سربراہ لوری گولر نے کہا کہ مجموعی طور پر برطرف کیے جانے والوں میں سے 54 فیصد کاروباری عہدوں پر فائز تھے اور باقی ٹیکنالوجی سے متعلق تھے۔ انہوں نے کہا کہ میٹا کی بھرتی کرنے والی ٹیم کو آدھا کر دیا گیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • USA
    • Share this:
      فیس بک کے مالک میٹا پلیٹ فارمز (Meta Platforms) نے جمعے کے روز ملازمین کو بتایا کہ وہ اسمارٹ ڈسپلے اور اسمارٹ واچز کو تیار کرنا بند کر دے گا اور اس ہفتے لاگت میں کمی کے بے مثال اقدام میں اس نے 11,000 ملازمتوں میں سے تقریباً نصف ٹیکنالوجی سے متعلق ملازمتوں کی کٹوتی کی ہے۔

      میٹا ایگزیکٹوز نے یہ بھی کہا کہ وہ کمپنی کے کچھ حصوں کو دوبارہ منظم کر رہے ہیں، ایک وائس اور ویڈیو کالنگ یونٹ کو دیگر میسجنگ ٹیموں کے ساتھ ملا رہے ہیں۔ ایگزیکٹوز نے کہا کہ سوشل میڈیا کمپنی کی 18 سالہ تاریخ میں پہلی بڑے پیمانے پر برطرفی نے ہر سطح اور ہر ٹیم پر عملے کو متاثر کیا۔ جس میں اعلی سطح کے ملازمین بھی شال ہیں۔

      میٹا ہیومن ریسورس کی سربراہ لوری گولر نے کہا کہ مجموعی طور پر برطرف کیے جانے والوں میں سے 54 فیصد کاروباری عہدوں پر فائز تھے اور باقی ٹیکنالوجی سے متعلق تھے۔ انہوں نے کہا کہ میٹا کی بھرتی کرنے والی ٹیم کو آدھا کر دیا گیا ہے۔

      انھوں نے کہا کہ میٹا نے اس سال کے شروع میں پورٹل ڈیوائسز کی مارکیٹنگ بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا، جو ان کی ویڈیو کالنگ کی صلاحیتوں کے لیے جانا جاتا ہے، اب وہ کاروباری فروخت پر توجہ مرکوز کرے گا۔ ایگزیکٹوز نے موسم گرما کے بعد بڑی تبدیلیاں کرنے کا فیصلہ کیا۔ بوس ورتھ نے کہا کہ اس میں اتنا وقت لگنے والا تھا، اور انٹرپرائز سیگمنٹ میں آنے کے لیے اتنی زیادہ سرمایہ کاری کرنے والی تھی، ایسا محسوس ہوا کہ آپ کا وقت اور پیسہ لگانے کا غلط طریقہ ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      چیف ٹیکنالوجی آفیسر اینڈریو بوسورتھ میٹاورس پر مبنی ریئلٹی لیبز ڈویژن چلاتے ہیں، انھوں نے عملے کو بتایا کہ میٹا پورٹل سمارٹ ڈسپلے ڈیوائسز اور اس کی اسمارٹ واچز پر اپنا کام ختم کردے گا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: