ہوم » نیوز » عالمی منظر

نیپال کے نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ نریندرمودی سے ملاقات کے بعد وطن واپس

نئی دہلی۔ نیپال کے نئے نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ کمل تھاپا اپنے سہ روز ہ دورہ ہند کے آخری دن آج یہاں وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کے بعد اپنے وطن واپس لوٹ گئے۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 19, 2015 05:33 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نیپال کے نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ نریندرمودی سے ملاقات کے بعد وطن واپس
نئی دہلی۔ نیپال کے نئے نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ کمل تھاپا اپنے سہ روز ہ دورہ ہند کے آخری دن آج یہاں وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کے بعد اپنے وطن واپس لوٹ گئے۔

نئی دہلی۔  نیپال کے نئے نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ کمل تھاپا اپنے سہ روز ہ دورہ ہند کے آخری دن آج یہاں وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کے بعد اپنے وطن واپس لوٹ گئے۔


مسٹر تھاپا نے آج ہوائی اڈے پر کاٹھمنڈو کے لیے طیارے پرسوارہونے سے پہلے کہا کہ وہ اس دورےسے بہت مطمئن ہیں۔ ان کا یہ دورہ دونوں ملکوں کے درمیان غلط فہمی کو دور کرنے میں کامیاب رہا۔ انہوں نے کہا کہ ایندھن کی سپلائی کے مسئلے پر ہم نے درخواست کی ہے کہ ایندھن اور روز مرہ ضروریات کی دیگر اشیاء کی سپلائي کو یقینی بنایا جائے"۔


اس سے پہلے مسٹر تھاپا نے سات ریس کورس روڈ پر واقع وزیر اعظم کی رہائش گاہ پر مسٹر نریندر مودی سے ملاقات کی۔ ان کے ساتھ نیپال کے خارجہ سکریٹری شنکر داس بیراگي اور ہندوستان میں تعینات نیپال کے سفیر دیپ کمار اپادھیائے بھی تھے۔ تقریبا 20 منٹ تک چلنے والی اس ملاقات کے دوران نیپال میں نئی ​​حکومت کے قیام، ملک کی نئی آئین میں ترمیم اور سیاسی استحکام کے لئے کئے جانے والے اقدامات پر گفتگو کی گئی اور ہند- نیپال سرحد ی چوکیوں پر ہندوستانی سامانوں کی سپلائی میں رکاوٹ اور اس کی وجہ سے نیپال کے لاکھوں لوگوں پیش آ نے والی پریشانیوں کے بارے میں بتایا گیا۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعظم نے انہیں نیپال کے لوگوں کی پوری مدد کرنے کی یقین دہانی کرائی۔


واضح رہے کہ ملک میں نئی آئین نافذ ہونے کے بعد سے جاری پرتشدد تحریک کی وجہ سے ملک میں ضروری اشیاء کی فراہمی میں خلل پڑنے سے پیدا ہونے والے بحران کا حل تلاش کرنے کے مقصد سے مسٹر تھاپا ہفتہ کی شام کو نئی دہلی پہنچے تھے۔ گزشتہ روز ا نہوں نے وزیر خارجہ سشما سوراج اور وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے ملاقات کی تھی۔ مسٹر تھاپا کے ساتھ نیپال کے خارجہ سکریٹری کے علاوہ تجارت اور سپلائی محکمہ کے سینئر افسران بھی آئے تھے۔


گزشتہ روز سب سے پہلے ہندوستان کے خارجہ سکریٹری ایس جے شنکر نے مسٹر تھاپا سے ملاقات کی تھی ۔ اس کے بعد حیدرآباد ہاؤس میں انہوں نے محترمہ سشما سوراج کے ساتھ دو طرفہ میٹنگ کی۔ ذرائع کے مطابق نیپالی حکام نے سرحدی چوکیوں پر ہندوستانی سامانوں سپلائي میں رکاوٹ کے بعد کی صورتحال کا جائزہ لیا۔ مسٹر تھاپا نے محترمہ سشما سوراج کے سامنے د سہرہ اور رام نومي کے موقع پر نیپال کے لوگوں کو درپیش پریشانیوں اور دونوں ممالک کے درمیان غلط فہمیوں کے بارے میں اپنا موقف واضح کیا۔ انہوں نے نیپال میں نئی ​​حکومت کے قیام، ملک کی نئی آئین میں ترمیم اور سیاسی استحکام کے لئے کئے جانے والے اقدامات کے بارے میں بھی باخبر کیا۔


ذرائع نے بتایا کہ وزیر خارجہ سشما سوراج نے سرحد پر نیپال کے مدھیسی لوگوں کی تحریک کی وجہ سے پیدا ہونے والی کشیدگی اور نیپال کی طرف سے مسلسل ہند مخالف پروپیگنڈے پر تشویش ظاہر کی۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ جب ہندوستان کی جانب سے اعلانیہ یا غیر اعلانیہ کوئی ناکہ بندی نہیں ہے تو پھر نیپال کی قیادت اور میڈیا میں بار بار یہ کیوں پروپیگنڈہ کیا جارہا ہے؟۔ انہوں نے مسٹر تھاپا سے اپیل کی کہ نیپالی حکومت اپنی اندرونی مسائل کو بات چیت اور مفاہمت کی بنیاد پر حل کرنے کے لئے قدم اٹھائے۔


نیپالی ذرائع کے مطابق دونوں لیڈروں کے درمیان اس میٹنگ میں سیاسی پہلوؤں پر زیادہ بات ہوئی۔ سرحد پر تعطل ختم کرنے کے لئے نیپالی حکام نے ہندوستانی حکام سے بات چیت کی۔ مسٹر تھاپا نے بھی بات چیت پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ یہ بات چیت مثبت رہی۔
انہوں نے کہا کہ "ہمیں یقین ہے کہ دو طرفہ مسائل کے حل کے لئے مشترکہ اقدامات کئے جائیں گے"۔ گزشتہ شام مسٹر تھاپا نے وزیر داخلہ مسٹر راجناتھ سنگھ سے ملاقات کی۔ میٹنگ میں دونوں لیڈروں نے ہند- نیپال تعلقات پر وسیع تبادلہ خیال کیا۔ بعد میں مسٹر سنگھ نے ٹوئیٹر پر کہا کہ ہندوستان اور نیپال جنوبی ایشیا میں امن، استحکام اور خوشحالی کے لئے ہمیشہ ایک دوسرے کے ساتھ ہیں۔

First published: Oct 19, 2015 05:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading