ہوم » نیوز » عالمی منظر

نیپال کے پاس پڑے ہیں نوٹ بندی کے 950 کروڑ روپے ، مودی سے کی جائے گی بدلنے کی درخواست

نیپال کے وزیر اعظم کے پی اولی اس ہفتہ ہندوستان کے دورہ پر آرہے ہیں۔ اس دورہ میں وہ ہندوستان کے سامنے ایک دلچسپ مطالبہ پیش کریں گے ۔

  • Agencies
  • Last Updated: Apr 04, 2018 11:11 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نیپال کے پاس پڑے ہیں نوٹ بندی کے 950 کروڑ روپے ، مودی سے کی جائے گی بدلنے کی درخواست
نیپال کے پاس بند ہوچکے 500 اور 1000 روپے کی شکل میں کروڑوں روپے پڑے ہیں۔ فائل فوٹو

نئی دہلی : نیپال کے وزیر اعظم کے پی اولی اس ہفتہ ہندوستان کے دورہ پر آرہے ہیں۔ اس دورہ میں وہ ہندوستان کے سامنے ایک دلچسپ مطالبہ پیش کریں گے ۔ یہ مطالبہ منسوخ ہوچکے پرانے نوٹوں سے وابستہ ہے ۔ نیپال کے پاس بند ہوچکے 500 اور 1000 روپے کی شکل میں کروڑوں روپے پڑے ہیں اور یہ اب کسی کام کے نہیں ہیں۔

یہ رقم 950 کروڑ روپے کے لگ بھگ ہے ۔ وزیر اعظم مودی نے 8 نومبر 2016 کو جب نوٹ بندی کا اعلان کیا تھا ، اس وقت یہ نوٹ غیر منظم سیکٹر اور لوگوں کے ہاتھوں میں تھے ۔ دونو ں ممالک کی حکومتوں کے درمیان اس بند ہوچکے نوٹوں کی تبدیلی کو لے کر ابھی تک اتفاق رائے قائم نہیں ہوسکا ہے۔

نوٹ بندی کے اعلان سے نیپال اور بھوٹان جیسے ممالک حیران رہ گئے تھے۔ ان ممالک میں ہندوستانی کرنسی کا کافی چلن ہے ۔ اولی نے منگل کو نیپال کی پارلیمنٹ کو بتایا کہ ہندوستان میں نوٹ بندی سے نیپال کے لوگوں کو کافی نقصان ہوا ہے ۔ ہندوستانی لیڈروں سے ملاقات کےد وران میں یہ معاملہ اٹھاوں گا اور اس کے معاملہ کے حل کیلئے کہوں گا ۔

ہندوستان نیپال کا سب سے بڑا تجارتی شراکت دار ہے اور روز مرہ کی اشیا کا سب سے بڑا سپلائر ہے۔ نیپال کے لوگ بڑی تعداد میں روپے کا استعمال کرتے ہیں اور سیونگ کو اسی کرنسی میں رکھتے ہیں۔ اولی جمعہ کو اپنے ہندوستان کےد ورہ کے دوران وزیر اعظم مودی اور صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کےساتھ ساتھ کئی دیگر افسران سے بھی ملاقات کریں گے۔

First published: Apr 04, 2018 11:11 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading