ہوم » نیوز » عالمی منظر

عدالت نے ایک شخص کو طیارے پر مسلم خاتون کا حجاب کھینچنے کا قصور وار قرار دیا

واشنگٹن۔ امریکہ میں نیو میکسیکو کی ایک عدالت نے طیارے پر سوار ایک مسلم خاتون کا حجاب (اسکارف) زبردستی کھینچنے کے معاملے میں گل پارکر پائینے نامی شخص کو قصوروار ٹھہرایا ہے، تاہم، ابھی اسے سزا نہيں سنائي گئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: May 14, 2016 02:25 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
عدالت نے ایک شخص کو طیارے پر مسلم خاتون کا حجاب کھینچنے کا قصور وار قرار دیا
واشنگٹن۔ امریکہ میں نیو میکسیکو کی ایک عدالت نے طیارے پر سوار ایک مسلم خاتون کا حجاب (اسکارف) زبردستی کھینچنے کے معاملے میں گل پارکر پائینے نامی شخص کو قصوروار ٹھہرایا ہے، تاہم، ابھی اسے سزا نہيں سنائي گئی ہے۔

واشنگٹن۔  امریکہ میں نیو میکسیکو کی ایک عدالت نے طیارے پر سوار ایک مسلم خاتون کا حجاب (اسکارف) زبردستی کھینچنے کے معاملے میں گل پارکر پائینے نامی شخص کو قصوروار ٹھہرایا ہے، تاہم، ابھی اسے سزا نہيں سنائي گئی ہے۔ عدالتی دستاویزات کے مطابق یہ واقعہ 11 دسمبر کا ہے جب شكاگو سے البوكرك کے لئے پرواز کرنے والے ساوتھ ویسٹ  ائیرلائن کے طیارے میں پارکر پائینے نے زبردستی ایک مسلم خاتون کا حجاب کھینچ دیا تھا۔ پاینے نے خواتین کی نشست کے سامنے جا کر کہا کہ "حجاب ہٹاؤ، یہ امریکہ ہے" اور پھر خود ہی ایک مسلم خاتون کا حجاب کھینچ دیا۔


سرکاری وکیل کے مطابق پائینے کی اس حرکت سے مذکورہ خاتون کا سر پوری طرح نظر آنے لگا اور یہ اس کے لئے کافی اشتعال انگیز تھا۔ واقعہ کے بعد خاتون نے فوری طور پر حجاب سے اپنا سر ڈھک لیا۔ اس معاملے کی سماعت کے دوران ڈپٹی چیف اسسٹنٹ اٹارنی جنرل ونیتا گپتا نے کہا کہ "تمام امریکی باشندے چاہے وہ کسی بھی مذہب کے ہوں ، کو بغیر کسی امتیاز اور تشدد کے پرامن طریقے سے اپنے مذہبی عقائد کو ماننے اور ان پر عمل کرنے کا حق ہے"۔


نیو میکسیکو کے امریکی اٹارنی ڈیمن پی مارٹنیج نے کہا کہ "یہ معاملہ واضح پیغام دیتا ہے کہ امریکہ میں دھمکی دے  کرکوئي کسی  شخص کے حقوق کی خلاف ورزی نہیں کر سکتا۔مسلم کمیونٹی سمیت تمام افراد کو اپنے مذہبی عقائد کو بغیر کسی خوف کے ماننے کی آزادی ہے۔

First published: May 14, 2016 02:20 PM IST