உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan: عمران خان کی راہ پر شہباز شریف، سعودی عرب سے مانگ آئے اتنا بڑا قرض، جانئے کیوں

    Pakistan : عمران خان کی راہ پر شہباز شریف، سعودی عرب سے مانگ آئے اتنا بڑا قرض

    Pakistan : عمران خان کی راہ پر شہباز شریف، سعودی عرب سے مانگ آئے اتنا بڑا قرض

    Pakistan Economic Crisis: سعودی عرب نے ایک بار پھر پیسوں کے بحران سے دوچار پاکستان کی مدد کے لیے ہاتھ بڑھایا ہے۔ اطلاعات ہیں کہ سعودی عرب پاکستان کو کئی کھرب روپے کا قرض دے گا۔ سعودی عرب کیش کی کمی کے شکار پاکستان کو تقریباً آٹھ ارب ڈالر کا بڑا پیکج دینے کیلئے تیار ہوگیا ہے ۔

    • Share this:
      اسلام آباد : پاکستان میں بھلے ہی حکومت بدل گئی ہو لیکن حکومت کی پالیسی پہلے کی طرح ہی ہے۔ نئے وزیر اعظم شہباز شریف بھی عمران خان کے راستے پر چل پڑے ہیں ۔ سعودی عرب نے ایک بار پھر پیسوں کے بحران سے دوچار پاکستان کی مدد کے لیے ہاتھ بڑھایا ہے۔ اطلاعات ہیں کہ سعودی عرب پاکستان کو کئی کھرب روپے کا قرض دے گا۔ سعودی عرب کیش کی کمی کے شکار پاکستان کو تقریباً آٹھ ارب ڈالر (149034960000 پاکستانی روپے) کا بڑا پیکج دینے کیلئے تیار ہوگیا ہے ۔ اس سے پاکستان کے گھٹتے زرمبادلہ کے ذخائر اور بحران زدہ معیشت کو بحال کرنے میں مدد ملے گی۔ یہ اطلاع اتوار کو ایک میڈیا رپورٹ میں دی گئی۔

       

      یہ بھی پڑھئے : عمران خان نے سابق اہلیہ ریحام خان پر اٹھائے سوال، کہا: میرے خلاف کتاب لکھنے کیلئے 'مافیا' شریف سے لئے تھے پیسے


      تاہم یہ پہلا موقع نہیں جب کسی پاکستانی وزیراعظم نے سعودی عرب سے قرض لیا ہو۔ شہباز سے پہلے عمران خان نے بھی سعودی عرب سے کئی ارب ڈالر کا قرض لیا تھا۔ یہاں تک کہ ایک مرتبہ سعودی کے الٹی میٹم کے بعد پاکستان نے چین سے پیسے لے کر سعودی کا قرض ادا کیا تھا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : عمران خان نے اپنی پارٹی کے حامیوں کو مظاہرہ کیلئے تیار رہنے کیلئے کہا، جانئے کب اور کیوں


      مہنگائی کی بلند شرح، کم ہوتے زرمبادلہ کے ذخائر، کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں اضافہ اور کرنسی کے کمزور ہونے کی وجہ سے پاکستان معاشی چیلنجز میں گھرا ہوا ہے۔ 'دی نیوز' کی خبر میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف سعودی عرب کے دورے پر گئے تھے، اس دوران یہ معاہدہ طے پایا ۔

      اس میں تیل کے لیے فنڈنگ، ڈپازٹس یا سکوک کے ذریعہ اضافی فنڈنگ اور 4.2 بلین ڈالر کی موجودہ سہولیات کو آگے لے جانا شامل ہے۔ ایک افسر نے بتایا کہ پاکستان نے تیل کے لئے فنڈنگ ​​1.2 بلین سے بڑھا کر 2.4 بلین کرنے کی تجویز دی تھی ، جسے سعودی عرب نے قبول کر لیا۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: