உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Liz Truss: برطانیہ کی نئی وزیراعظم لز ٹرس نےمعاشی ترقی کاکیاعزم، کیااب برطانیہ کی قسمت بدلےگی؟

    لز ٹرس (Liz Truss)

    لز ٹرس (Liz Truss)

    لز ٹرس (Liz Truss) نے کہا کہ میں اس ہفتے توانائی کے بلوں سے نمٹنے اور مستقبل میں توانائی کی فراہمی کو محفوظ بنانے کے لیے کارروائی کروں گی۔ انھوں نے کہا کہ ملک کو معیشت، توانائی اور صحت کے شعبہ میں مزید ترقی کی ضرورت ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, Indiaukuk
    • Share this:
      لز ٹرس (Liz Truss) نے منگل کے روز وعدہ کیا کہ برطانیہ موجودہ معاشی بدحالی کے باوجود آنے والے دنوں میں معاشی خوشحالی کی طرف سفر کرے گاکیونکہ انہوں نے بورس جانسن (Boris Johnson) سے عہدہ سنبھالنے کے بعد بطور وزیر اعظم اپنی پہلی تقریر میں اس بات کا ذکر کیا ہے۔

      اس دوران موسلا دھار بارش اور گرج چمک نے ملک کی تیسری خاتون وزیر اعظم کے حامیوں کو ڈھانپنے پر مجبور کر دیا جب وہ ڈاؤننگ اسٹریٹ (Downing Street) میں ان کے آنے کا انتظار کر رہے تھے۔ لیکن اس وقت بادل چھٹ گئے جب 47 سالہ سابق سیکرٹری خارجہ کا موٹرسائیکل کے ذریعہ داخلہ ہوا اور انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ملک دو ہندسوں کی افراط زر اور توانائی کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے طوفان سے نکل جائے گا۔

      لز ٹرس نے کہا کہ میں اس ہفتے توانائی کے بلوں سے نمٹنے اور مستقبل میں توانائی کی فراہمی کو محفوظ بنانے کے لیے کارروائی کروں گی۔ انھوں نے کہا کہ ملک کو معیشت، توانائی اور صحت کے شعبہ میں مزید ترقی کی ضرورت ہے۔ وائٹ ہاؤس کے مطابق امریکی صدر جو بائیڈن (Joe Biden) نے کہا کہ وہ بورس جانسن سے باضابطہ طور پر عہدہ سنبھالنے کے بعد نئے برطانوی وزیر اعظم کو فون کریں گے۔ جولائی میں جانسن کے استعفیٰ کے ساتھ شروع ہونے والے سخت مقابلے کے بعد پیر کو کنزرویٹو پارٹی کے ارکان کے اندرونی ووٹوں سے ٹرس کو فاتح قرار دیا گیا۔ جس کے بعد اب وہ وزیر اعظم بن گئی ہیں۔

      وہ اسکاٹش ہائی لینڈز میں ملکہ الزبتھ دوم سے ملاقات کے لیے لندن سے 1,600 کلومیٹر کے چکر کے بعد ڈاؤننگ اسٹریٹ پہنچی، جہاں انہوں نے حکومت بنانے کی دعوت قبول کی۔ 30 منٹ تک سامعین سے خطاب کیا۔

      توانائی کا بحران

      وزیر اعظم کے طور پر پارلیمنٹ میں ان کی پہلی پیشی سے قبل بدھ کی صبح کابینہ کے اجلاس کے لیے ان کی نئی ٹیم پارلیمنٹ میں حاضر ہوگی۔ توقع ہے کہ بزنس سیکریٹری کواسی کوارٹینگ وزیر خزانہ بنیں گے، اٹارنی جنرل سویلا بریورمین ہوم سیکریٹری کے مشکل بریف میں اور جیمز کلیورلی کو خارجہ امور کے لیے منتقل کردیا گیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      NCERTکا انکشاف: امتحان و نتائج کی فکر سے دباؤ میں رہتے ہیں 33فیصدی طلبہ،3.79لاکھ بچوں پر سروے

      یہ بھی پڑھیں:

      دہلی میں اس سال بھی دیوالی کے موقع پر پٹاخوں پر رہے گی مکمل پابندی، گوپال رائے کا بیان

      اگر تصدیق ہو جاتی ہے تو اس کا مطلب یہ ہو گا کہ پہلی بار برطانیہ کے چار اہم وزارتی عہدوں پر کوئی بھی سفید فام آدمی نہیں ہے۔ آنے والے وزیر اعظم کو ایک مشکل کام کی فہرست کا سامنا ہے، برطانیہ گذشتہ چند دہائیوں سے اپنے بدترین معاشی بحران کی گرفت میں ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: