ہوم » نیوز » عالمی منظر

بڑی خبر: نائیجر میں مہلک تشدد، بندوق برداروں کے حملے میں 137  لوگوں کی موت

غور طلب ہے کہ جنوری میں ملک کے مغرب میں واقع تونکمبنگو اور جرومدارے گاؤں میں بھی حملہ کیا گیا تھا جس میں کم سے کم سو لوگ ہلاک ہوئے تھے۔

  • Share this:
بڑی خبر: نائیجر میں مہلک تشدد، بندوق برداروں کے حملے میں 137  لوگوں کی موت
غور طلب ہے کہ جنوری میں ملک کے مغرب میں واقع تونکمبنگو اور جرومدارے گاؤں میں بھی حملہ کیا گیا تھا جس میں کم سے کم سو لوگ ہلاک ہوئے تھے۔

مالی سے متصل نائیجیریا کی نائیجیر  (Niger) کی ہنگامہ خیز سرحد کے پاس واقع گاؤں میں موٹر سائیکل سوار بندوق بردار نے(Village Attacks Near Mali Border) حملہ کر دیا جس میں کم از کم 137 افراد مارے گئے ہیں۔ حکومے نے اسے حال ہی میں ہوئے سب سے مہلک تشدد قرار دیا۔


حکومت کے ترجمان عبدالرحمٰن ذکریا نے اتوار کو ہوئے اس حملے کی تصدیق پیر کو کی۔ نائیجر کی Constitutional court نے اسی دن محمد بجوم کی چناؤ میں جیت کی تصدیق بھی کی تھی۔ نائیجر میں انتخابات فروری میں ہوئے تھے۔ بجوم ملک کے نئے صدر ہوں گے۔ وہ دو اپریل کو صدر کے عہدے کا کام سنبھالیں گے۔


غور طلب ہے کہ جنوری میں ملک کے مغرب میں واقع تونکمبنگو اور جرومدارے گاؤں میں بھی حملہ کیا گیا تھا جس میں کم سے کم سو لوگ ہلاک ہوئے تھے۔ اس دن نائیجر نے اکیس فرقری کو صدارتی انتخابات کعائے جانے کا اعلان کیا تھا۔ وہیں تقریبا ایک ہفتے سے بھی کم پہلے ہوئے حملے میں کم سے کم 66 لوگ مارے گئے تھے۔ نائیجر میں حال ہی میں ہوئے حملوں کی کسی دہشت گرد تنظیم نے ذمےداری نہیں لی ہے۔


(ڈسکلیمر: یہ خبر سیدھے سنڈیکیٹ فیڈ سے پبلش ہوئی ہے۔ اسے نیوز 18 ٹیم نے edited نہیں کیا ہے۔)
Published by: Sana Naeem
First published: Mar 23, 2021 05:19 PM IST