اپنا ضلع منتخب کریں۔

    کیااب ٹوئٹرپرحروف کی بندوش ختم ہوجائے گی؟ ایلون مسک نے ٹویٹ کی حدسے چھٹکارا پر دیا یہ جواب

    صرف 1 فیصد ٹویٹس 280 حروف کی حد کو پہنچتی ہیں

    صرف 1 فیصد ٹویٹس 280 حروف کی حد کو پہنچتی ہیں

    کمپنی نے سب سے پہلے صارفین کے ایک چھوٹے گروپ کے ساتھ ستمبر 2017 میں اپنے روایتی 140 حروف سے آگے بڑھنے کے منصوبے کا اعلان کیا۔ متعدد ٹویٹر صارفین نے دلیل دی تھی کہ 280 حروف ٹویٹر کو کم پڑھنے کے قابل بنا دیں گے کیونکہ پلیٹ فارم کی وضاحتی خصوصیت پوسٹس کا مختصر ہونا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, IndiaUSAUSA
    • Share this:
      ایلون مسک نے اتوار کو تصدیق کی کہ ٹویٹر جلد ہی اپنے پلیٹ فارم پر 280 حروف کی حد کو بڑھا سکتا ہے یا اس سے بھی چھٹکارا پا سکتا ہے۔ ایک صارف نے پوچھا کہ کیا ہم حروف کی حدود سے چھٹکارا پا سکتے ہیں، یا کم از کم اسے بہت بڑھا سکتے ہیں، تو اس کے جواب میں مسک نے کہا کہ بالکل!

      مسک نے ایک تلخ جنگ کے بعد ٹویٹر کو 44 بلین ڈالر میں حاصل کیا ہے، انھوں نے اس سال اپریل میں کہا تھا کہ مائیکرو بلاگنگ پلیٹ فارم کو طویل شکل کی ٹویٹس کی ضرورت ہے جو کہ زیر التوا ہے۔ ٹویٹر فی الحال لوگوں کو 280 حروف میں پوسٹ کرنے کی اجازت دیتا ہے۔ ایک صارف کے ٹویٹ تھریڈ پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے مسک نے کہا کہ تھریڈ سے میرا سب سے فوری فائدہ یہ ہے کہ ٹویٹر طویل شکل والی ٹویٹس کے لیے بہت زیادہ تاخیر کا شکار ہے! اس مسئلہ کو حل ہی کیا جائے گا۔

      اس سے قبل مسک نے ایڈٹ بٹن کا مطالبہ کیا تھا اور مائیکرو بلاگنگ پلیٹ فارم نے اعلان کیا تھا کہ وہ ایک ایسے فیچر پر کام کر رہا ہے جو صارفین کو کچھ اصولوں کے باوجود اپنی ٹویٹس میں غلطیوں کو درست کرنے کی اجازت دے گا۔ ٹویٹر نے نومبر 2017 میں انگریزی سمیت معاون زبانوں میں تمام صارفین کے لیے 280 حروف کا آغاز کیا۔

      کمپنی نے سب سے پہلے صارفین کے ایک چھوٹے گروپ کے ساتھ ستمبر 2017 میں اپنے روایتی 140 حروف سے آگے بڑھنے کے منصوبے کا اعلان کیا۔ متعدد ٹویٹر صارفین نے دلیل دی تھی کہ 280 حروف ٹویٹر کو کم پڑھنے کے قابل بنا دیں گے کیونکہ پلیٹ فارم کی وضاحتی خصوصیت پوسٹس کا مختصر ہونا ہے۔

      تاہم ٹوئٹر کے اپنے حروف کی تعداد کو 140 سے 280 حروف تک دگنا کرنے کے فیصلے نے ٹوئٹر کی پوسٹس کی لمبائی کو ڈرامائی طور پر تبدیل نہیں کیا۔ کمپنی کے مطابق ٹوئٹر اب بھی مختصر خیالات کے لیے ایک بہترین جگہ ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 

       

      کمپنی کی طرف سے چند سال پہلے فراہم کردہ ڈیٹا کے مطابق صرف 1 فیصد ٹویٹس 280 حروف کی حد کو پہنچتی ہیں اور صرف 12 فیصد ٹویٹس 140 حروف سے زیادہ لمبی ہیں۔ صرف 5 فیصد ٹویٹس 190 حروف سے زیادہ لمبی تھیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: