உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    North Korea: کم جونگ نے امریکہ کو دیا نئی پابندیوں کا جواب،ٹرین سے داغی دو ’بیلسٹک میزائل‘، بتائی وجہ

    امریکی پابندیوں کا نارتھ کوریا نے  نئے میزائل تجربے سے دیا جواب۔

    امریکی پابندیوں کا نارتھ کوریا نے نئے میزائل تجربے سے دیا جواب۔

    پیونگ یانگ کی سرکاری نیوز ایجنسی کے سی این اے نے کہا ہے، ’یہ تجربہ ریلوے ریجمنٹ کی کارروائی کے طریقہ کار کی افادیت کو جانچنے کے لیے کیے گئے ہیں۔‘ اس سے پہلے شمالی کوریا نے ٹرین سے ہی ستمبر 2021 میں میزائل داغی تھیں۔

    • Share this:
      پیونگ یانگ: شمالی کوریا (North Korea) نے ایک بار پھر میزائل تجربہ کیا ہے۔ اُس نے ٹرین سے دو گائیڈیڈ میزائل داغی ہیں۔ اس بات کی اطلاع سرکاری میڈیا نے ہفتہ کو دی۔ امریکہ کی نئی پابندیوں کے باوجود ڈکٹیٹر کم جونگ اُن (Kim Jong Un) ہتھیاروں کی ٹسٹنگ سے ذرا بھی پیچھے نہیں ہٹ رہے ہیں۔ یہ مہینے میں لگاتار تیسرا ایسا تجربہ ہے۔ جنوبی کوریا کی فوج کا کہنا ہے کہ اس نے جمعہ کی شام دو کم دوری تک مار کرنے والی بیلسٹک میزائل (Ballistic Missile) کے لانچ ہونے کا پتہ لگایا ہے۔ شمالی کوریا نے امریکہ پر اُکسانے کا الزام لگانے کے کچھ گھنٹوں بعد ہی میزائل ٹسٹ کیا۔

      پیونگ یانگ کی سرکاری نیوز ایجنسی کے سی این اے نے کہا ہے، ’یہ تجربہ ریلوے ریجمنٹ کی کارروائی کے طریقہ کار کی افادیت کو جانچنے کے لیے کیے گئے ہیں۔‘ اس سے پہلے شمالی کوریا نے ٹرین سے ہی ستمبر 2021 میں میزائل داغی تھیں(Did North Korea Test a Missile Today)۔ کے سی این اے کا کہنا ہے، ’جمعہ کو کیے گئے ٹسٹ سے میزائل کی تیز رفتار اور ٹارگیٹ کو اڑانے کی سطح کا پتہ چلتا ہے۔‘ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ، ’ملک بھر کی ٹرینوں میں میزائل داغنے کے لئے مکمل آپریٹنگ سسٹم قائم کرنے جیسے موضوع پر بات چیت کی گئی۔‘

      میزائلوں نے کتنی دوری طئے کی؟
      وہیں سیول (جنوبی کوریا) کے جوائنٹ چیف آف اسٹاف نے کہا ہے کہ جمعہ کے لانچ میں میزائلوں نے 36 کلو میٹر کی اونچائی پر 430 کلو میٹر (270 میل) کی دوری طئے کی ہے۔ اس سے پہلے 5 جنوری اور 11 جنوری کو شمالی کوریا نے ہائپر سونک میزائل کے دو کامیاب تجربے کیے تھے۔ انہی تجربوں کے جواب میں امریکہ نے اس ہفتے اُس پر نئی پابندیاں لگادی تھی۔ امریکہ کے وزیر خارجہ اینٹی بلنکن نے کہا کہ شمالی وکریا ایسا کر کے ’دھیان کھینچنے کی کوشش کررہا ہے۔‘
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: