ہوم » نیوز » عالمی منظر

پٹھان کوٹ حملے میں مسعود اظہر کا ہاتھ نہيں: پاکستان

اسلام آباد۔ پاکستان نے کہا ہے کہ ہندستان میں پنجاب کے پٹھان کوٹ فوجی ہوائی اڈے پر گزشتہ ماہ دہشت گردانہ حملے میں ممنوعہ جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر کا ہاتھ ہونے کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 08, 2016 02:57 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
پٹھان کوٹ حملے میں مسعود اظہر کا ہاتھ نہيں: پاکستان
اسلام آباد۔ پاکستان نے کہا ہے کہ ہندستان میں پنجاب کے پٹھان کوٹ فوجی ہوائی اڈے پر گزشتہ ماہ دہشت گردانہ حملے میں ممنوعہ جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر کا ہاتھ ہونے کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔

اسلام آباد۔  پاکستان نے کہا ہے کہ ہندستان میں پنجاب کے پٹھان کوٹ فوجی ہوائی اڈے پر گزشتہ ماہ دہشت گردانہ حملے میں ممنوعہ جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر کا ہاتھ ہونے کا کوئی ثبوت نہیں ہے۔ پاکستانی اخبار 'ایکسپریس ٹربیون' کے مطابق تفتیشی ٹیم نے کہا ہے کہ اظہر نے حملے کی منصوبہ بندی کی یا اس کا حکم دیا اس کا بھی کوئی ثبوت نہیں ہے۔


پٹھان كوٹ ائیر بیس پر حملے کی تحقیقات کے لئے چھ رکنی تفتیشی ٹیم کا قیام پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف نے کیا تھا۔ ہندستان کا دعوی ہے کہ یہ حملہ جیش محمد نے کیا اور دہشت گرد جنوبی پنجاب کے ضلع بہاولپور سے آئے تھے۔ ہندستان نے یہ دعوی موبائل فون رابطے کی بنیاد پر کیا ہے۔ حملہ آوروں اور پاکستان میں ان کے آقاوں سے بات چیت کی  تفصیل ہندستانی خفیہ ایجنسیوں نے پاکستان کو دی تھی۔ اس کے بعد ہی پنجاب میں جیش محمد کے خلاف مہم شروع کی گئی اور اس کے دفتر کو سربمہر کر دیا گیا۔ اس کے اراکین کو حراست میں بھی لیا گیا۔ ہندستان کی طرف سے فراہم کردہ معلومات کی بنیاد پر پاکستان کی  تفتیشی ٹیم نے تحقیقات کی اور اب اگر ہندستان کوئی نیا ثبوت دیتا ہے تو پاکستانی تفتیشی ٹیم کے ہندستان آنے کابھی امکان ہے۔

First published: Feb 08, 2016 02:57 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading