ہوم » نیوز » عالمی منظر

مسلمانوں کے خلاف سیاسی بیان بازیوں سے دکھی ہیں براک اوباما

واشنگٹن۔ امریکہ کے صدر براک اوباما کیلی فورنیا میں فائرنگ کے واقعہ کے بعد مسلم کمیونٹی کے خلاف نشانہ بنا کر کی جا رہی 'سیاسی بیان بازیوں' سے کافی دکھی ہیں۔

  • IBN7
  • Last Updated: Dec 05, 2015 02:03 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مسلمانوں کے خلاف سیاسی بیان بازیوں سے دکھی ہیں براک اوباما
واشنگٹن۔ امریکہ کے صدر براک اوباما کیلی فورنیا میں فائرنگ کے واقعہ کے بعد مسلم کمیونٹی کے خلاف نشانہ بنا کر کی جا رہی 'سیاسی بیان بازیوں' سے کافی دکھی ہیں۔

واشنگٹن۔ امریکہ کے صدر براک اوباما کیلی فورنیا میں فائرنگ کے واقعہ کے بعد مسلم کمیونٹی کے خلاف نشانہ بنا کر کی جا رہی 'سیاسی بیان بازیوں' سے کافی دکھی ہیں۔ وائٹ ہاؤس کے پریس سیکرٹری جوش ارنسٹ نے کہا کہ امریکہ میں محب وطن مسلم کمیونٹی کوحاشیہ پر لانے کی کوئی بھی کوشش اسلامک اسٹیٹ اور القاعدہ جیسی دہشت گرد تنظیموں کی باتوں کو صرف صحیح ثابت کرنے میں مدد کرے گی۔


ارنسٹ نے کہا کہ صدر ان سیاسی بیان بازیوں سے دکھی ہیں جسے ہم نے مسلمانوں کے خلاف ہوتے دیکھا ہے اور مجھے لگتا ہے کہ صدر نے گزشتہ دو ہفتوں میں اس بارے میں کافی زور دے کر بات کی ہے۔ ساتھ ہی، مجھے لگتا ہے کہ صدر کو اس بات کا یقین ہے کہ امریکیوں کی زیادہ تر آبادی اس بنیادی اصول کو سمجھتی ہے کہ لوگوں کو ان کے مذہبی عقیدے کی بنیاد پر تشدد کے لئے نشانہ نہیں بنایا جا سکتا۔ یہ ہمارے ملک کے بنیادی اقدار ہیں۔ یہ ایسے اقدار ہیں جن کی حفاظت کی جانی چاہئے۔


ارنسٹ نے کیلی فورنیا فائرنگ کے بعد مسلم کمیونٹی میں لوگوں کے غصے کا شکار بننے کے خوف کے بارے میں سوالات پوچھے جانے پر یہ بات کہی۔ انہوں نے کہا کہ اگر کسی مسجد کو کسی خاص خطرے سے بچانے کے لئے کچھ خصوصی اقدامات اٹھائے جانے کی ضرورت ہو گی تو مجھے یقین ہے کہ مقامی قانون نافذ کرنے والے ادارے اس اقدام کے تئیں پابند عہد ہیں اور اگر انہیں وفاقی حکومت کا تعاون چاہئے تو مجھے پورا یقین ہے کہ انہیں یہ تعاون ملے گا۔


ارنسٹ نے کہا کہ القاعدہ اور آئی ایس جیسے گروپوں اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کے خلاف ہماری کوششوں کی کامیابی کے لئے یہ واضح کرنا اہم ہے کہ امریکہ ان تنظیموں کے خلاف متحارب ہے لیکن ہماری جنگ اسلام سے نہیں ہے۔ ہم دنیا کے مسلمانوں کے خلاف متحارب نہیں ہیں۔
First published: Dec 05, 2015 02:03 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading